واہگہ پر بھارتی گیٹ تک کیسے پہنچا؟

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

لاہور کے قریب پاکستان اور بھارت کے درمیان واہگہ سرحدی چوکی پر رات ایک بھارتی شہری نے گاڑی ٹکرا دی۔

ٹکر کے وقت دونوں ملکوں کے سرحدی گیٹ بند تھے تاہم اس ٹکر سے بھارت کی جانب لگا گیٹ ٹوٹ گیا۔

رات سوا تین بجے کے قریب بھارتی شہری سکونت سنگھ بھارت کی بارڈر سکیورٹی فورسز (بی ایس ایف) کی تمام چیک پوسٹیں عبور کرتے ہوئے واہگہ بارڈر پر لگے گیٹوں تک آ پہنچے اور ان میں گاڑی دے ماری۔

واہگہ بارڈر پر ایک نیا دروازہ

گاڑی کی ٹکر سے بھارت کی جانب لگا گیٹ ٹوٹ گیا اور گاڑی کے دو ٹائر زیرو لائن کراس کر گئے۔ پاکستان کی جانب لگا گیٹ ٹکر سے مڑ گیا تاہم ٹوٹا نہیں۔

ٹکر کے فوراً بعد بی ایس ایف کے جوانوں نے ڈرائیور کو گاڑی سے نکال کر حراست میں لیا اور گاڑی کو زیرو لائن سے پیچھے دھکیل دیا۔

سکونت سنگھ بھارتی پنجاب کے رہنے والے ہیں۔ اس واقعے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

اس واقعے سے پاکستان اور بھارت کے درمیان سخت نگرانی والی سرحد پر سکیورٹی سے متعلق بھی کئی سوالات اٹھائے جارہے ہیں۔ کہ آخر سکونت سنگھ آدھی رات کو بی ایس ایف کی متعدد چوکیاں عبور کرتے ہوئے زیرو لائن تک پہنچنے میں کیسے کامیاب ہوئے۔

اسی بارے میں