’صحافیوں کے تحفظ کے لیے صوبائی حکومتوں سے مشاورت کر رہے ہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ سنہ 2013 کے مقابلے میں کراچی اور کوئٹہ سمیت بلوچستان میں حالات اب پہلے سے بہت بہتر ہیں

پاکستان کے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کا کہنا ہے کہ کراچی میں شدت پسندوں کے خلاف جاری آپریشن سے شہر میں حالات بہتر ہو رہے ہیں اور آئندہ کچھ دونوں میں کراچی آپریشن میں تیزی آئی گی۔ انھوں نے کہا کہ ملک بھر میں صحافیوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے وفاقی حکومت صوبائی حکومت سے مشاورت کر رہی ہے۔

سنیچر میں واہ کینٹ میں میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ کراچی کے حالات آپریشن کا تقاضہ کر رہے تھے جس کے بعد تمام سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے آپریشن شروع کیا گیا۔

کراچی میں مسلح افراد کی فائرنگ سے تین رینجرز اہلکار ہلاک

کراچی میں جیو نیوز کی وین پر فائرنگ سے انجینیئر ہلاک

انھوں نے کہا کہ آپریشن کے بعد حالات میں بہت بہتری آئی ہے اور اگر پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کو آپریشن کے حوالے سے خدشات ہیں تو حکومت اُس کے ازالے کے لیے تیار ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption حالات اب اتنے برے نہیں ہیں لیکن صحافی ابھی بھی نشانہ بن رہے ہیں: چوہدری نثار علی خان

کراچی میں صحافیوں کو نشانہ بنانا کے حوالے سے وزیر داخلہ نے کہا کہ ماضی میں کراچی میں صحافیوں کو مارا جا رہا تھا اور اُن کے مقدمات کا بھی کوئی پرسانِ حال نہیں تھا۔

انھوں نے کہا کہ ’ہم نے مقدمات کو منتطقی انجام تک پہنچایا ہے۔ حالات اب اتنے برے نہیں ہیں لیکن صحافی ابھی بھی نشانہ بن رہے ہیں اور انھیں تحفظ فراہم کرنے کے لیے حکومت صوبائی حکومت سے مشاورت کر رہی ہے۔‘

چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ سنہ 2013 کے مقابلے میں کراچی اور کوئٹہ سمیت بلوچستان میں حالات اب پہلے سے بہت بہتر ہیں۔

سابق وزیر ڈاکٹر عاصم کی رینجرز میں تحویل اور نیب میں اُن کے خلاف ہونے والی تحقیقات کے حوالے سے وزیر داخلہ نے کہا کہ ’اس مقدمے میں تمام کارروائی قانون کے مطابق ہو گی۔

اسی بارے میں