بلوچستان میں فائرنگ سے دو پولیس اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں نامعلوم مسلح افراد کے حملے میں دو پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے۔

یہ واقعہ جمعے کو شہر کے ملتانی محلہ کے علاقے میں پیش آیا۔

گوالمنڈی پولیس سٹیشن کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ ملتانی محلہ کے علاقے میں دو پولیس اہلکار ایک مسجد اور بیکری کے قریب سکیورٹی پر تعینات تھے کہ نامعلوم مسلح افراد نے ان پر فائرنگ کر دی۔

بلوچستان: پولیس افسر حملے میں شدید زخمی، دو اہلکار ہلاک

بلوچستان میں تین پولیس اہلکار ہلاک

پاکستان میں پولیس فورس شدت پسندوں کے نشانے پر، چھ ہلاک

پولیس اہلکار کے مطابق حملے کے نتیجے میں دونوں پولیس اہلکار ہلاک جبکہ حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

پولیس اہلکار نے ابتدائی تفتیش کے حوالے سے بتایا کہ یہ ٹارگٹ کلنگ واقعہ ہے۔

خیال رہے کہ رواں ہفتے کے دوران کوئٹہ شہر میں پولیس اہلکاروں پر حملے کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ اس سے قبل سریاب روڈ کے علاقے میں نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے دو پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

کوئٹہ سمیت بلوچستان کے دیگر علاقوں میں گذشتہ سال پولیس اہلکاروں پر حملوں کے 32 مختلف واقعات پیش آئے۔ ان حملوں میں 36 پولیس اہلکار ہلاک اور 20 زخمی ہوئے تھے۔

کوئٹہ کے علاقے کچلاک سے متصل ضلع پشین کے علاقے پوٹی ناصران میں گذشتہ روز ایک شخص ہلاک ہوا تھا۔

پشین میں لیویز فورس کے ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والے شخص کی شناخت محمد عالم کے نام سے ہوئی ہے جن پر نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے حملہ کیا تھا۔

بعض اطلاعات کے مطابق محمد عالم طالبان کا کمانڈر تھا لیکن لیویز فورس کے ذرائع نے اس بات کی تصدیق نہیں کی۔ ذرائع کے مطابق محمد عالم سابق جنگجو رہا ہے۔

اسی بارے میں