راج کپور کا مکان گرانے کے جرم میں گرفتار مزدور رہا

Image caption تحریک انصاف کی حکومت نے دلیپ کمار اور راج کپور کے مکانات کو عجائب گھروں میں تبدیل کرنے کا اعلان کیا تھا

پاکستان کے صوبے خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں ایک مقامی عدالت نے برصغیر کی فلم انڈسٹری کے عظیم فنکار راج کپور کے مکان کو مسمار کرنے کے جرم میں گرفتار کیے جانے والے پانچ مزدوروں کو ضمانت پر رہا کر دیا ہے۔

اس کیس کے تفتیشی افسر ظاہر شاہ خان نے بی بی سی کو بتایا کہ گرفتار کیے جانے والے پانچوں ملزمان کو پیر کے روز مقامی مجسٹریٹ جمیل خان کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

راج کپور کا مکان مسمار کرنے پر پانچ افراد گرفتار

ظاہر شاہ خان کے مطابق فاضل جج نے دونوں طرف کے وکلا کے دلائل مکمل ہونے کے بعد ملزمان کی ضمانت پر رہائی کے احکامات جاری کیے۔

رہا ہونے والے افراد میں چار مزدور اور ایک چوکیدار شامل ہے۔

پولیس اہلکار کے مطابق استغاثہ کی جانب سے عدالت میں ایسے کوئی شواہد پیش نہیں کیے گئے جس سے یہ ثابت ہو سکے کہ راج کپور کا مکان حکومت کی طرف سے ثقافتی ورثہ قرار دیا گیا تھا۔

انھوں نے کہا کہ وکلا کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ کچھ سال پہلے حکومت کی طرف سے مذکورہ مکان کو ثقافتی ورثہ قرار دینے کے احکامات جاری کیے گئے تھے۔ تاہم اس سلسلے میں مزید کوئی قانونی کارروائی نہیں کی گئی تھی۔

دوسری جانب پشاور کے علاقے ڈھکی منور شاہ میں واقع راج کپور کا آبائی مکان آج تیسرے روز بھی بند ہے۔ مکان کے آس پاس رہنے والے افراد کا کہنا ہے کہ پولیس کی طرف سے مکان پر چھاپے کے بعد یہاں ہر قسم کا کام روک دیا گیا تھا۔

Image caption یہ مکان راج کپور کے والد نے سنہ 1918 میں تعیمر کیا تھا

اس سلسلے میں محکمہ آثار قدیمہ کے ڈائریکٹر کا موقف معلوم کرنے کے لیے ان سے کئی بار رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی لیکن کامیابی نہیں ہو سکی۔

خیال رہے کہ گذشتہ اتوار کو پشاور پولیس کی طرف سے راج کپور کے آبائی مکان کو مسمار کرنے کے جرم میں پانچ مزدوروں کوگرفتار کیا گیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ یہ گرفتاری محکمہ آثار قدیمہ کے ڈائریکٹر عبدالصمد کی طرف سے کابلی پولیس سٹیشن میں ایف آئی آر کے اندراج کے بعد عمل میں لائی گئی تھی۔

اس درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ راج کپور کا مکان حکومت کی طرف سے ثقافتی ورثہ قرار دیا جا چکا ہے، لہٰذا اس کی مسماری غیر قانونی ہے اور اسے فوری طور پر روک دیا جائے۔

ڈھکی منورشاہ قصہ خوانی میں واقع راج کپور کا آبائی مکان تقریباً سو سال پرانا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ مکان راج کپور کے والد نے سنہ 1918 میں تعمیر کیا تھا۔

اسی بارے میں