شیخوپورہ میں مبینہ مقابلے میں ’سات شدت پسند ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اتوار کی شب ضلع ڈیرہ غازی خان کے تھانہ گدائی کی حدود میں وڈور روڈ پر دہشت گردوں کی موجودگی کی خفیہ اطلاع ملنے پر کارروائی کی گئی

پاکستان کے صوبہ پنجاب میں پولیس حکام کا کہنا ہے کہ شیخوپورہ کے نواح میں پولیس اور محکمۂ انسدادِ دہشت گردی کے اہلکاروں سے فائرنگ کے تبادلے میں سات شدت پسند ہلاک ہوئے ہیں۔

یہ مبینہ مقابلہ منگل اور بدھ کی درمیانی شب شرقپور کے علاقے میں شیخوپورہ اور شرقپور کو ملانے والی سڑک پر ہوا۔

ہلاک ہونے والوں کا تعلق کالعدم تحریک طالبان پاکستان اور لشکر جھنگوی سے بتایا جاتا ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ انسدادِ دہشت گردی کے محکمے کے اہلکاروں کی ایک ٹیم نے علاقے میں شدت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی کی تو ان پر فائرنگ کی گئی۔

حکام کے مطابق جوابی فائرنگ سے موٹر سائیکلوں پر فرار ہونے کی کوشش کرنے والے سات شات پسند مارے گئے۔

ہلاک شدگان کی شناخت اٹک سے تعلق رکھنے والے اویس عثمان، جھنگ کے ندیم عباس، باجوڑ ایجنسی کے رضوان کے علاوہ میاں غوری، ضیا اسلم، شفیع اللہ اور لالہ زاد کے ناموں سے کی گئی ہے۔

پولیس کے مطابق شدت پسندوں کے قبضے سے کلاشنکوفیں، بندوقیں، پستول اور دو کلو دھماکہ خیز مواد بھی برآمد ہوا ہے۔

اس واقعے کی ایف آئی آر لاہور کے انسداد دہشتگردی تھانے میں درج کروا دی گئی ہے۔

اسی بارے میں