کوئٹہ میں پولیو کے ایک نئے مریض کی تصدیق

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستان میں گذشتہ ہفتے ہی 83 ’ہائی رسک اضلاع‘ میں تین روزہ انسدادِ پولیو مہم منعقد ہوئی تھی

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں پولیو کے ایک نئے مریض کی تصدیق ہوئی ہے جو صوبے میں رواں برس سامنے آنے والا پہلا مریض ہے۔

صوبائی محکمۂ صحت کے ذرائع نے اس نئے کیس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ پولیو سے متاثر ہونے والا بچہ اکرام احمد ڈھائی برس کا ہے۔

ذرائع کے مطابق متاثر ہونے والا بچہ سمنگلی روڈ کا رہائشی ہے۔

محکمہ صحت کے ذرائع کے مطابق رواں سال کے دوران یہ بلوچستان میں تصدیق ہونے والے پولیو کا پہلا جبکہ پاکستان میں تیسرا کیس ہے۔

گذشتہ سال کوئٹہ سمیت بلوچستان کے دیگر علاقوں میں مجموعی طور پر پولیو کے چھ نئے مریضوں کی تصدیق ہوئی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستان کی حکومت نے پولیو کو قومی ایمرجنسی قرار دیا ہے

پاکستان میں گذشتہ ہفتے ہی 83 ’ہائی رسک اضلاع‘ میں تین روزہ انسدادِ پولیو مہم منعقد ہوئی تھی۔

کسی بھی علاقے کو پولیو کے لیے ہائی رسک قرار دیے جانے کا مطلب ہے کہ پہلے بھی وہاں پولیو کے کیس سامنے آ چکے ہیں یا وہاں آبادی تیزی سے آتی جاتی رہتی ہے۔

اس کے علاوہ ایسے علاقے جہاں والدین اپنے بچوں کوویکسین پلانے سے انکاری ہوں یا بچے گھر پر موجود نہ ہوں ایسے علاقوں کو بھی ہائی رسک قرار دیا جاتا ہے۔

اس مہم کے دوران کوئٹہ سمیت بلوچستان کے اُن 15اضلاع میں بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے گئے تھے جن میں اس بیماری کی موجودگی کا خدشہ موجود ہے۔

پاکستان کی حکومت نے پولیو کو قومی ایمرجنسی قرار دیا ہے حکومت کی جانب سے چاروں صوبوں میں ایسے ایمرجنسی سنٹرز قائم کیے گئے ہیں جو انسداد پولیو کے لیے کام کر رہے ہیں۔

اسی بارے میں