’کوہلی نہیں اب صرف آفریدی کا مداح ہوں‘

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے شہر اوکاڑہ میں گھر پر بھارتی جھنڈا لہرانے والے ویراٹ کوہلی کے مداح عمر دراز کو رہا کر دیاگیا ہے۔

اپنی رہائی کے بعد بی بی سی سے بات کرتے ہوئے عمر دارز کا کہنا تھا کہ ’اب میں کو ہلی کا مداح نہیں ہوں بلکہ شاہد آفریدی کا مداح ہوں۔‘

عمردراز کے بقول کوہلی کے باعث انھیں تکلیف پہنچی ہے اس لیے اب وہ کوہلی کو پسند نہیں کرتے۔

اپنی رہائی پر خوشی کا اظہار کر تے ہوئے ان کا کہنا تھا کا ان سے نادانستہ طور پر غلطی ہوگئی تھی ۔

جب ان سے کہا گیا کہ کھیل میں تو کسی کی بھی حمایت کی جاسکتی ہے اور بھارتی کھلاڑی کا مداح ہونا جرم تو نہیں ہے تو عمر دراز اس بات پر بضد رہے کہ اب وہ صرف شاہد آفریدی کے مداح ہیں۔

خیال رہے کہ پولیس نے 25 جنوری کو اوکاڑہ کے نواحی گاوں چون بٹہ دو ایل کے رہائشی عمر دارز کو بھارت اور آسٹریلیا کے درمیان ٹی 20 کرکٹ میچ میں ویراٹ کوہلی کے شاندار کھیل اور اس کے نتیجے میں بھارت کی فتح کی خوشی میں اپنے مکان پر بھارت کا جھنڈا لہرانے پر حراست میں لیا تھا۔

عمردراز پر پولیس نے نقصِ امن کی دفعہ 16 ایم پی او اور تعزیرات پاکستان کی دفعہ 123 اے کے تحت مقدمہ درج کیا تھا جس میں جرم ثابت ہونے پر زیادہ سے زیادہ 10 برس قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

گرفتاری کے وقت عمردراز کا موقف تھا کہ وہ بھارتی کرکٹر ویراٹ کوہلی کا مداح ہے اور ان کی شاندار کارگردگی کی خوشی میں ہی اس نے بھارت کا جھنڈا اپنے گھر پر لہرایا تھا، اس میں بدنیتی کا عنصر شامل نہیں تھا۔ جو بھی ہوا وہ لاعلمی اور انجانے میں ہوا۔

اوکاڑہ کے ایڈیشنل سیشن جج اسد اللہ سراج نے 50,000 روپے کے مچلکوں کے عوض گذشتہ روز عمر دارز کی ضمانت کی درخواست کی منطوری کی تھی۔

اسی بارے میں