ایف سی کے آپریشن میں ’پانچ عسکریت پسند ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ایف سی ماضی میں بلوچ عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائیاں کرتی رہی ہے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع ڈیرہ بگٹی میں سکیورٹی فورسز نے ایک کارروائی میں پانچ عسکریت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

کوئٹہ میں فرنٹیئر کور کے ترجمان کے مطابق ایف سی اور حساس ادارے کے اہلکاروں نے ڈیرہ بگٹی میں اتوار کو ایک مشترکہ سرچ آپریشن کیا۔

ترجمان نے دعویٰ کیا کہ سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں ایک کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے پانچ عسکریت پسند ہلاک ہوئے جبکہ ایک کو زخمی حالت میں گرفتار کیا گیا ہے۔

ترجمان کے مطابق ہلاک ہونے والے افراد اور گرفتار شخص سکیورٹی فورسز اور گیس کی تنصیبات پر حملوں کے علاوہ دیگر سنگین جرائم میں ملوث تھے ۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ اس کاروائی کے دوران عسکریت پسندوں کے ٹھکانوں سے اسلحہ بھی برآمد کیا گیا ۔

ایف سی کے ترجمان کے مطابق ڈیرہ بگٹی کے علاقے سوئی اور خاران میں کالعدم تنظیموں سے تعلق کے شبہے میں بھی پانچ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

ادھر قوم پرست جماعت بلوچ رپبلکن پارٹی نے ڈیرہ بگٹی میں آپریشن میں عسکریت پسندوں کی ہلاکت کے دعوے کو مسترد کیا ہے ۔

بی آر پی کے ترجمان شیر محمد بگٹی نے مقامی میڈیا کو جاری کیے جانے والے ایک بیان میں دعویٰ کیا ہے کہ پھیلاوغ کے علاقے میں آپریشن میں مارے جانے والے عام شہری تھے۔

انھوں نے دعویٰ کیا کہ اس کاروائی کے دوران 11 افراد ہلاک ہوئے جن میں گوٹھ لال خان میں ایک گھر پر گولہ گرنے سے ہلاک ہونے والے افراد بھی شامل ہیں۔

اسی بارے میں