پاکستان میں بارشوں سے ہلاکتوں میں اضافہ

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption تین دن تک جاری رہنے والی بارشوں کی وجہ سے نشیبی علاقوں میں پانی بھر گیا

پاکستان کے وسطی اور بالائی علاقوں میں گذشتہ تین دن کے دوران ہونے والی طوفانی بارشوں سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 49 ہوگئی ہے جبکہ 80 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

قدرتی آفات سے نمٹنے کے قومی ادارے این ڈی ایم اے کی جانب سے پیر کو جاری کیے گئے اعدادوشمار کے مطابق بارشوں سے سب سے زیادہ نقصان صوبہ بلوچستان میں ہوا ہے جہاں 18 افراد کی جان گئی اور 22 زخمی ہوئے جبکہ 49 مکانات کو نقصان پہنچا۔

اس کے علاوہ قبائلی علاقوں میں 15، پنجاب میں دس اور صوبہ خیبر پختونخوا میں چھ افراد مارے گئے۔

زخمیوں میں سے 25 کا تعلق قبائلی علاقہ جات، 15 کا خیبر پختونخوا اور 18 کا پنجاب سے بتایا گیا ہے۔

بارشوں کے نتیجے میں سب سے مہلک حادثہ لوئر اورکزئی ایجنسی کے علاقے ڈولی میں پیش آیا جہاں بارش کی وجہ سے کوئلے کی کان بیٹھنے سے سات مزدور ہلاک ہوئے۔

منہدم ہونے والی کان سے اتوار کی شب مزید دو لاشیں نکالے جانے کے بعد وہاں امدادی آپریشن ختم کر دیا گیا۔

اس حادثے میں ہلاک ہونے والے افراد کا تعلق وادی سوات کے ضلع شانگلہ الپوری اور اورکزئی ایجنسی سے بتایا گیا ہے۔

پاکستان کے محکمۂ موسمیات کا کہنا ہے کہ ایک سے دو دن کے وقفے کے بعد ملک میں بارشوں کا ایک نیا سلسلہ شروع ہو سکتا ہے۔

اسی بارے میں