کراچی میں ’رینجرز سے مقابلہ، چار شدت پسند ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ’اس مقابلے کے دوران تین دہشت گرد ہلاک جبکہ چوتھا فرار ہوگیا، ملزمان کے قبضے سے اسلحہ بھی برآمد کیا گیا ہے‘

پاکستان کے شہر کراچی میں رینجرز کے ساتھ ایک مبینہ مقابلے میں چار مشتبہ شدت پسند ہلاک ہوگئے ہیں۔

رینجرز کے ترجمان کا دعویٰ ہے کہ یہ ملزمان کسی بڑی کارروائی کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔

رینجرز کے ترجمان کا کہنا ہے کہ پیر اور منگل کی درمیانی شب منگھوپیر کے علاقے میں شدت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع پر آپریشن کیا گیا تو ملزمان نے اپنے ٹھکانوں سے فائرنگ کی۔

ان کے مطابق کئی گھنٹے تک جاری رہنے والے مقابلے میں چار مشتبہ ملزمان ہلاک ہوگئے جبکہ رینجرز کا ایک اہلکار زخمی ہوا۔

رینجرز کا دعویٰ ہے کہ ملزمان شہر میں کسی بڑی تخریب کاری کی منصوبہ بندی کر رہے تھے، جس کو ناکام بناد یا گیا ہے، تاہم وہ منصوبہ بندی کیا تھا اور ملزمان کا تعلق کس گروپ سے تھا رینجرز کے اعلامیے میں یہ واضح نہیں۔

منگھو پیر اور آس پاس کے علاقوں میں کالعدم تحریک طالبان اور اس کے گروہوں کا اثر رہا ہے اور یہاں ماضی میں بھی متعدد چھوٹے چھوٹے آپریشن کیے گئے ہیں۔

یاد رہے کہ کراچی میں جاری آپریشن اور قومی ایکشن پلان کے تحت شدت پسندوں کے خلاف پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارروائیاں جاری ہیں۔

انسانی حقوق کمیشن کا کہنا ہے کہ شہر میں ٹارگٹ کلنگز کے واقعات میں تو کمی آئی ہے لیکن ماورائے عدالت قتل کے واقعات میں اضافہ ہوگیا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال پولیس اور رینجرز سے مقابلوں میں 696 مشتبہ ملزمان ہلاک ہوئے تھے۔

اسی بارے میں