لاہور کے مصروف پارک میں دھماکہ، ’کم از کم 40 ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور کے ایک مصروف گلشن اقبال پارک میں دھماکے میں کم از کم 40 افراد ہلاک جبکہ 80 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔

لاہور میں مقامی صحافی عاصم نصیر کے مطابق ڈی سی او لاہور کیپٹن عثمان کے مطابق اقبال ٹاؤن کے علاقے میں واقع تفریحی مقام گلشن اقبال میں دھماکے میں40 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

پولیس اور ریسکیو ذرائع کے مطابق زخمی ہونے والوں میں بڑی تعداد میں بچے اور خواتین شامل ہیں۔

پولیس کے مطابق یہ خودکش دھماکہ تھا اور دھماکے میں سات سے دس کلو دھاکہ خیز مواد استعمال کیا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق دھماکہ گلشن اقبال پارک کے اندر ہوا۔

لاہور کے تمام بڑے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے گلشن اقبال دھماکے کی رپورٹ آئی جی پنجاب سے طلب کر لی ہے۔

گلشن اقبال نامی یہ پارک شہر کے وسط میں واقع ہے جو بچوں کے مقبول ترین تفریح گاہوں میں سے ایک ہے اور عام طور پر چھٹی کے دن وہاں لوگوں کا رش ہوتا ہے۔

دھماکے کے بعد امدادی کارروائیاں جاری ہیں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے۔

صدر ممنون حسین اور وزیر اعظم نواز شریف نے دھماکے کی مذمت کی ہے۔ صدر نے کہا ہے کہ بزدلانہ کارروائیوں سے دہشت گردی کے خلاف عزم متزلزل نہیں ہوگا۔

مزید تفصیلات موصول ہو رہی ہیں۔

اسی بارے میں