’طالبان کو میرا سٹائل پسند نہیں آیا‘

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

کل کی بات ہے کہ تقریباً تین بج کر 40 منٹ کے قریب شہباز تاثیر نےسماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لوگوں کے تجسس بھرے سوالات کے جواب دیے۔ لوگوں نے نہ صرف شہباز بلکہ ان کی بیوی ماحین سے بھی سوالات کیے۔

شہباز کی ٹوئٹس پڑھ کر یہ نہیں لگا کہ وہ پانچ سال کا طویل عرصہ طالبان کی قید میں ایک مشکل زندگی میں رہے۔

ٹویٹر پر ان کا یہ سیشن بے حد مقبول ہوا اور پھر ہیش ٹیگ AskST# ٹرینڈ کرنا شروع ہو گیا۔

کسی نے پوچھا کہ ’آپ نے اپنے منفی تجربے اور خیالات کو کیسے اپنے اوپر حاوی نہ ہونے دیا اور مثبت سوچ کی طرف کیسے راغب ہوئے؟ شہباز نے جواب دیا ’بس ’ڈیلیٹ‘ کا بٹن دبا دیا‘ اور ساتھ میں ہنستا چہرہ لگایا۔

ایک ٹوئٹر صارف نے ان سے پوچھا کہ کیا طالبان نے ان کو اپنے ساتھ شامل ہونے کو کہا تو انھوں نے جواب دیا کہ طالبان کو میرا سٹائل پسند نہیں آیا۔

بی بی سی سے خصوصی گفتگو میں شہباز تاثیر نے کل کے ٹوئٹر تجربہ کے حوالے سے کہا ’ بہت لوگوں نے میری واپسی کے لیے دعائیں مانگیں اور یہ ایک نہایت عمدہ چیز ہے اور اب انھی لوگوں کے ساتھ بات چیت کرنے سے میرے دل پر بہت اثر ہوا ہے‘

لوگوں کے سوالوں کو جواب دیتے ہوئے ان کا رویہ مزاحیہ رہا۔

جب میں نے ان کی بیوی ماحین تاثیر سے پوچھا کہ ٹوئٹر پر بات کرنے کا خیال کہاں سے آیا تو انھوں نے بتایا کہ ’ٹوئٹر پر لوگوں نے کئی دن پہلے ہم سے سوال پوچھنا شروع کئے اور پھر ہم نے کل سوچا کہ کیوں نہ جواب دیں تو بس اتفاقاً ہی یہ شروع ہو گیا‘۔

تصویر کے کاپی رائٹ twitter

میں نے پوچھا کہ ٹوئٹر پر لوگوں سے شہباز کے واپس آنے پر کھلے دل سے بات کرنا کیسا لگا؟ تو جواب ملا ’بہت آزادانہ احساس ہوا اور شہباز کو ملنے کے لیے میں سالوں سے انتظار کر رہی تھی اور آخر کار میں اس کے بارے میں بات کر سکتی تھی۔ ایسا لگا کہ میں دوبارہ زندہ ہوئی ہوں اور مجھے اپنی دوبارہ سے پچان ملی ہے۔ اور سب سے بڑی یہ بات ہے کہ لوگ ہماری خوشی میں ہمارے ساتھ شامل ہوئے ۔‘

سوشل میڈیا اظہار رائے کے حوالے سے ایک کھلا میدان سمجھا جاتا ہے۔ میں نے ماحین تاثیر سے پوچھا کہ کیا کوئی منفی رائے یا کسی کا ناگوار رویہ بھی تھا؟ تو انھوں نے جواب دیا ’ نہیں خوش قسمتی سے ٹوئٹر پر کسی نے بھی منفی بات نہیں کی۔‘

زیادہ تر جو سوالات پوچھےگئے وہ ان کی عام زندگی سے بچھڑنے کے بارے میں تھے۔ ٹوئٹر پر پاکستان کے حوالے سے زیادہ تر ایسی خبریں ہی ملتی ہیں جو بم دھماکوں یا دہشت گردی سے متعلق ہوں لیکن شہباز اور ماحین کی یہ ٹوئٹس ٹوئٹر کے صارفین کے لیے امید کی کرن لائی ہیں اور لوگوں کے لیے خوشی کا باعث بنیں اور لوگ بہت متاثر ہوئے۔

عوام کی جانب سے شہباز تاثیر سے محبت کا اظہار تو ہر ٹوئٹ میں ہی نظر آیا لیکن پزا ہٹ نے انھیں فری پیزا بھجوا کر ان کی بہادری کو داد دی۔

اسی بارے میں