کراچی میں فائرنگ، دو افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption فائرنگ کے نتیجے میں علی ساجد اور ہاشم رضوی ہلاک جبکہ شمیم رضوی زخمی ہوگئے

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں دہشت گردی کے ایک واقعہ میں دو افراد ہلاک ہوگئے ہیں جن کا تعلق شیعہ مسلک سے بتایا گیا ہے۔

پولیس نے واقعےکو ٹارگٹ کلنگ کا نتیجہ قرار دیا ہے۔ یہ واقعہ جمعہ کی دوپہر شفیق موڑ کے قریب پیش آیا۔

ایس ایس پی عارب مہر کے مطابق تینوں افراد امام بارگاہ سے جمعے کی نماز کے بعد واپس آ رہے تھے کہ موٹر سائیکل پر سوار دو حملہ آوروں نے ان پر فائرنگ کر دی۔

فائرنگ کے نتیجے میں علی ساجد اور ہاشم رضوی ہلاک جبکہ شمیم رضوی زخمی ہوگئے۔

زخمی شمیم رضوی کو عباسی شہید ہپستال منقتل کیا گیا جہاں ان کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

دوسری جانب مجلس وحدت مسلمین کے ترجمان نے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مقتولین اور زخمی بفر زون میں واقع امام بارگاہ بابائے نجف میں جمعے کی نماز کی ادائیگی کے بعد واپس جا رہے تھے کہ انھیں نشانہ بنایا گیا۔

کراچی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن کے بعد ٹارگٹ کلنگز کے واقعات میں نمایاں کمی واقع ہو ئی تھی۔

گذشتہ دنوں پولیس کی جانب سے سپریم کورٹ میں پیش کی گئی رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ ایسے واقعات 70 فیصد کم ہو چکے ہیں۔

اسی بارے میں