کرپشن کے خلاف تحریک سندھ سے شروع ہو گی: عمران

عمران خان تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption عمران خان نے جلسہ گاہ میں موجود کارکنوں سے ملک میں موجود تمام اقلیتوں کو تحفظ دینے اور اُنھیں وی آئی پی بنانے کا وعدہ بھی لیا

پاکستان میں حزبِ مخالف کی جماعت پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ وہ رواں ماہ کی 26 تاریخ سے صوبہ سندھ میں کرپشن کے خلاف تحریک شروع کریں گے اور اگلے اتوار کو لاہور کے چیئرنگ کراس میں ایک اور جلسہ منعقد کریں گے جہاں وہ رائیونڈ مارچ اور کرپشن کے خلاف تحریک کے بارے میں لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔

وہ اتوار کو دارالحکومت اسلام آباد میں تحریک انصاف کے بیسویں یومِ تاسیس کے موقع پر ایک جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے۔

عمران خان نے کہا کہ ’وزیرِ اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف اگر آپ نے پانامہ پیپرز کے تناظر میں حزبِ مخالف کی جماعتوں کی مشاورت سے تحقیقاتی کمیشن نہیں بنایا، اگر ٹرمز آف ریفرنس یا دائرۂ اختیار پر فیصلہ نہیں کیا، اگر بین الاقوامی فورنزک کمپنی سے تحقیقات میں مدد نہیں لی، اگر آپ نے پھر سے سوچا کہ ایمپائر کے ساتھ مل کر میچ کھیل لیں گے تو پھر تحریکِ انصاف، عمران خان اور پاکستانی قوم سڑکوں پر آئے گی اور رائیونڈ جائے گی۔‘

عمران خان نے اپنی تقریر میں وزیرِ اعلی صوبہ خیبر پختونخوا کے مشیر برائے اقلیتی امور سورن سنگھ کے قتل پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ سورن سنگھ کے اہلِ خانہ انڈیا منتقل ہوچکے تھے اور اُنھوں نے پاکستان میں ہی رہنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اِس موقع پر عمران خان نے جلسہ گاہ میں موجود کارکنوں سے ملک میں موجود تمام اقلیتوں کو تحفظ دینے اور اُنھیں وی آئی پی بنانے کا وعدہ بھی لیا اور نوجوانوں پرعورتوں کے حقوق کی حفاظت کرنے پر بھی زور دیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption عمران خان کے جلسے میں عوام نے بڑی تعداد میں شرکت کی

عمران خان نے اپنی سیاسی جماعت پاکستان تحریکِ انصاف کے الیکشن کرانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی جماعت میں انتخابات کرائیں گے اور اُسے ایک ادارہ بنائیں گے لیکن وزیر اعظم نواز شریف کی رہائش گاہ رائیونڈ کی جانب مارچ کے بعد۔

اُنھوں نے اُمید ظاہر کی کہ وزیرِ اعظم ان کی مارچ سے قبل ہی ایک ایسے کمیشن کا اعلان کر دیں گے جو اُنکا احتساب کرے گا۔

عمران خان نے حکومت کے ترقیاتی منصوبوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں ڈھائی کروڑ بچے خوراک کی کمی کا شکار ہیں، کسان پیداوار پوری نہیں کر پا رہے اِس وجہ سے غذا کی قلت کا بھی سامنا ہے اور حکومت اورنج ٹرین اور میٹرو بس جیسے اربوں کے منصوبے بنا رہی ہے تاکہ اُن سے کمیشن حاصل ہو سکے۔

انھوں نے شوکت خانم کینسر ہسپتال کے بارے میں حکومتی الزامات کادفاع کرتے ہوئے شوکت خانم ہسپتال کے مالیاتی امور کی تحقیقات کی پیشکش کی اور پنجاب حکومت پر الزام لگایا کہ تیس سال سے حکومت میں رہنے کے باوجود کوئی ایک ایسا ہسپتال نہیں بنایا گیا جہاں وزیر اعظم علاج کرا سکیں۔

جلسے سے قبل حکمراں جماعت کے رکن اور وفاقی وزیِ اطلاعات پرویز رشید نے اِس جلسے کے بارے میں کہا تھا کہ لوگوں کو جمع کرکے اُنھیں گانے سنا کر تقریر سنائی جائے گی اور اس کے علاوہ یہ جلسہ کچھ نہیں ہو گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ PTI
Image caption پی ٹی آئی کا جلسہ مقررہ وقت سے دو گھنٹے تاخیر سے شروع ہوا

دو روز قبل وزیرِ اعظم نے ٹیلی ویژن پر خطاب میں بدعنوانی کی روک تھام کے لیے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کو خط لکھنے کا وعدہ کیا تھا، تاہم پی ٹی آئی سمیت حزبِ اختلاف کی دوسری جماعتوں نے اسے مسترد کر دیا ہے۔

عمران خان نے گذشتہ روز کہا تھا کہ سب سے پہلے نواز شریف اور ان کے خاندان کا احتساب ہونا چاہیے۔

تحریکِ انصاف کا جلسہ پانچ بجے شروع ہونا تھا تاہم عمران خان کے سات بجے کے بعد جلسہ گاہ پہنچنے کی وجہ سے جلسہ تاخیر کا شکار ہو گیا۔

دوسری طرف کراچی میں متحدہ قومی موومنٹ نے اپنے لاپتہ کارکنوں کی بازیابی کے لیے وزیر اعلیٰ ہاؤس تک مارچ کیا۔

اُدھر لاہور میں جماعت اسلامی کے سربراہ سراج الحق نے ایک جلسے سے خطاب کیا اور وزیراعظم نوازشریف پر پاناما لیکس کے تناظر میں تنقید کی۔

اسی بارے میں