’مزارعین پر ریاستی طاقت کے استعمال کا نوٹس لیا جائے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پیپلز پارٹی کے سینیٹر فرحت اﷲ بابر نے اوکاڑہ ملٹری فارم کے مزارعین کے خلاف ریاستی طاقت کے استعمال سے پیدا ہونے والے مضمرات پر بحث کے لیے سینیٹ میں تحریکِ التوا جمع کروا دی ہے۔

سینیٹر فرحت اﷲ بابر کی جانب سے میڈیا کو جاری کیے جانے والے بیان کے مطابق تحریکِ التوا میں کہا گیا ہے کہ کسانوں نے عالمی یومِ کسان کے موقعے پر 17 اپریل کو اپنے حقوق کو اجاگر کرنے کے لیے پرامن اور آئینی انداز میں اظہار کیا تھا لیکن ریاست نے اس خوف سے کہ اس کے ظلم بے نقاب ہو جائیں گے، ان دیہاتیوں کے خلاف طاقت کا بےدریغ استعمال کیا۔

’نہتے دیہاتیوں کو مارا پیٹا اور درجنوں کو گرفتار کر لیا گیا۔ ان پر دہشت گردی کے مقدمات بنا دیے گئے۔‘

* ’پاپا کو گندم کی بوری کی طرح پھینکا‘

* ’فوج کھل کر طاقت استعمال نہیں کر سکتی‘

* ’کسانوں سے تنازعے کو دہشت گردی بنایا جا رہا ہے‘

تحریکِ التوا میں اس خدشے کا اظہار بھی کیا گیا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ ان لوگوں پر فوجی عدالتوں میں مقدمات چلائے جائیں۔ اس سے ایک ایسی صورت حال پیدا ہو سکتی ہے جس سے ریاست اور سماج کے لیے مضمرات پیدا ہو سکتے ہیں۔

بیان کے مطابق تحریکِ التوا میں کہا گیا ہے کہ ’دہشت گردوں اور مزارعین کے درمیان فرق روا رکھا جانا چاہیے ورنہ دہشت گردی کے خلاف جنگ متاثر ہو سکتی ہے۔ ایسی صورت حال کا سینیٹ کو نوٹس لینا چاہیے۔‘

Image caption کسانوں اور فوج کے درمیان اوکاڑہ اور پنجاب کے 22 دیہاتوں میں زمین کی ملکیت کا تنازع کئی دہائیوں سے چل رہا ہے

’مزارعین کے حقوق ان کو دیے جائیں۔ جنرل مشرف کے دورِ حکومت میں ان مزارعین پر ظلم پر ہیومن رائٹس واچ نے بھی کہا تھا کہ پاکستانی فوج بجائے ان کسانوں کے حقوق کا تحفظ کرنے کے ان پر ظلم کر رہی ہے۔ اب ایک مرتبہ پھر عالمی طور پر ملک کی بدنامی ہو سکتی ہے اس لیے اس معاملے پر ایوان میں بحث کرائی جائے۔‘

گذشتہ ماہ عوامی ورکرز پارٹی کے جنرل سیکریٹری فاروق طارق نے کہا تھا کہ انجمنِ مزارعین نے کسانوں کے عالمی دن کے موقعے پر ایک کنونشن کی تیاری کی تھی لیکن ضلعی انتظامیہ نے اس پر نیشنل ایکشن پلان کے تحت پابندی عائد کر دی اور کہا کہ یہ دہشت گردی ہے۔

ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان نے الزام لگایا تھا کہ صوبہ پنجاب کے ضلع اوکاڑہ میں فوج اور مقامی کسانوں کے درمیان کئی برس سے چلنے والے زمینی تنازعے کو دہشت گردی کا رنگ دیا جا رہا ہے۔

اسی بارے میں