پاکستان نے ملا منصور کی ہلاکت کی تصدیق کر دی

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption ایف آئی اے نے پاسپورٹ آفس کے اُن افسران کے بارے میں بھی تحقیقات شروع کردی ہیں جنہوں نے افغان طالنان کمانڈر ملا اختر منصور کو ولی محمد کے نام سے پاکستانی پاسپورٹ جاری کیا تھا

پاکستانی حکومت نے گذشتہ ہفتے امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہونے والے افغان طالبان کے امیر ملا اختر منصور کی ہلاکت کی تصدیق کر دی ہے۔

اتوار کو وزارت داخلہ کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ بلوچستان میں ہلاک ہونے والے دوسرے شخص کی شناخت ڈی این اے ٹسیٹ کے ذریعے کی گئی ہے جس کی رپورٹ حکومت کو موصول ہوگئی ہے۔

٭ نوشکی میں ڈرون حملے کا مقدمہ امریکی حکام کے خلاف درج

٭ ملا منصور: اسرار کے سائے

٭پاکستانی حدود میں ڈرون حملہ، امریکی سفیر کی طلبی

وزارت داخلہ کے مطابق ملا اختر منصور کی میت لینے کے لیے اُن کے عزیز نے پاکستانی حکومت سے رابطہ کیا تھا جس کے بعد اُن کا ڈی این اے ٹسیٹ کروایا گیا جو ملا اختر منصور سے مل گیا ہے۔

اس بارے میں حکومت نے ابھی تک کوئی معلومات فراہم نہیں کیں کہ آیا ملا اختر منصور کی لاش اُن کے عزیزوں کے حوالے کر دی گئی ہے یا نہیں۔

واضح رہے کہ ایک ہفتے کے بعد حکومت نے ملا اختر منصور کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے جبکہ اس سے پہلے امریکہ نے اس بات کی تصدیق کر دی تھی کہ نوشکی کے قریب امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہونے والہ ایک شخص افغان طالبان کمانڈر ملا اختر منصور ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption وزارت داخلہ کے مطابق ملا اختر منصور کی میت لینے کے لیے اُن کے عزیز نے پاکستانی حکومت سے رابطہ کیا تھا

وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اس سے قبل کہا تھا کہ ملا اختر منصور کی ہلاکت اور امریکی ڈرون حملے پر ردعمل قومی سلامتی کی کمیٹی کے اجلاس کے بعد کیا جائے گا جس میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان بھی شرکت کریں گے۔

وزیراعظم میاں نواز شریف کی صحت کی خرابی کی وجہ سے قومی سلامتی کی کمیٹی کا اجلاس نہیں ہوسکا۔

خارجہ امور کے بارے میں وزیر اعظم کے مشیر سرتاج عزیز نے ڈی این اے کی رپورٹ آنے سے پہلے کہا تھا کہ تمام اشارے ظاہر کر رہے ہیں کہ ملا اختر منصور ہلاک ہو چکے ہیں تاہم وہ سرکاری طور پر ڈی این آے کی رپورٹ آنے تک اس کی تصدیق نہیں کر سکتے۔

دوسری جانب ایف آئی اے نے پاسپورٹ آفس کے اُن افسران کے بارے میں بھی تحقیقات شروع کر دی ہیں جنہوں نے افغان طالبان کمانڈر ملا اختر منصور کو ولی محمد کے نام سے پاکستانی پاسپورٹ جاری کیا تھا جس پر وہ متعدد بار بیرون ممالک کا سفر کر چکے ہیں۔

اسی بارے میں