’آج بہت افسردہ دن ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ

’کاش کہ لوگ ایک دوسرے سے بھی ویسے ہی محبت کرتے جیسے مجھ سے کرتے ہیں۔اگر وہ ایسا کریں تو دنیا بہت خوبصورت ہوجائے گی۔‘

صحافی انور شاہ کے مطابق باکسر محمد علی سے ملاقات کرنے والی سوات کی سماجی خاتون حدیقہ بشیرکا کہنا ہے کہ’یہ الفاظ غیر معمولی صلاحیتوں اور عظیم ترین خیالات کے مالک محمد علی کے ہیں جو عظیم کھلاڑی ہونے کے علاوہ ایک دردمند انسان بھی تھے، حوصلے اور عزم کا پیکر محمد علی جو اکثر و بیشتر انسانی حقوق کے خلاف ورزیوں پر آواز بلند کرتے تھے زندگی کو ایک مثبت نظر سے دیکھنے کے عادی تھے اور دنیا کو محبت کا پیغام دیتے رہے۔‘

٭ محمد علی کے جنازے کی تقریب کا دعاؤں سے آغاز

٭ ’لوگ محمد علی کی طرف کھنچے چلے آتے تھے‘

محمد علی کی موت پر جہاں پوری دنیا میں ان کے چاہنے والے آبدیدہ ہے وہاں حدیقہ بشیر بھی ان کےمغفرت کے لیے دعا گو ہیں۔

سوات کے علاقے سیدو شریف کی رہائشی حدیقہ بشیر بھی اپنی زندگی کی اس لمحے کویادگار ترین لمحہ قرار دیتی ہے جب انھیں امریکہ میں ’محمد علی انٹرنیشنل ہیومینیٹرین ایوارڈ‘ دیاگیا تھا۔ حدیقہ بشیر کو یہ ایوارڈ کم عمری کی شادی کے خلاف جدو جہد کرنے پر ملا ہے

حدیقہ بشیر جو طالبانائزیشن سے متاثرہ ضلع سوات میں کم عمری میں بچیوں کے شادی کے خلاف نبرد آزما ہے۔

انھوں نے بی بی سی کو بتایا کہ محمد علی کی وفات کی افسوسناک خبر صدمے سے کم نہیں اور یہ افسردہ دن ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption حدیقہ بشیر بھی اپنی زندگی کے اس لمحے کو یادگار ترین لمحہ قرار دیتی ہیں جب انھیں امریکہ میں ’محمد علی انٹر نیشنل ہیومینیٹرین ایوارڈ‘ دیاگیا تھا

’وہ لمحہ وہ کبھی نہیں بھول پائے گی جب انھیں محمد علی ایوارڈ ملا تھا ان کے مطابق وہ اور ان کے دیگر ساتھی محمد علی کے لیے دعائیہ کلمات اور افسوس کا اظہار کر رہے ہیں کیونکہ وہ ایک اچھے انسان تھے اور انھیں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا‘۔

حدیقہ کہتی ہے کہ محمد علی کے بیوی نے انھیں محمد علی کےزندگی پر شائع ایک کتاب تحفے میں دی ہے اور یہ کتاب ان کے لیے ایک قیمتی اثاثہ ہے کیونکہ یہ ان کی نشانی ہے جس سے وہ ہیمشہ سنبھال کر رکھیں گی۔

حدیقہ نے بتایا کہ محمد علی سے مل کر ان میں ایک نیا جذبہ پیدا ہوا ہے کیونکہ محمد علی کہتے تھے کہ عظیم کام کرو اور عظیم انسان بنو اور میں بھی ان کے نقش قدم پر چل کر عظیم بنا چاہتی ہوں۔

محمد علی زندگی کے ہر شعبہ سے وابستہ افراد کے پسندیدہ ہیرو تھے لوگ انھیں شاندار الفاظ میں یاد کرکے کہتے ہے کہ وہ عظیم انسان تھے اور ہمیشہ عظیم ترین ہی رہیں گے۔

اسی بارے میں