پاکستانی حدود میں آنے والے ڈرون مار گرائے جائیں: حافظ سعید

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption حافظ سعید کے سر پر ایک کروڑ امریکی ڈالر کا انعام مقرر ہے

اسلام آباد میں ایک بڑے امریکہ مخالف جلسے میں جماعۃ الدعوہ کے سربراہ حافظ سعید احمد نے کہا ہے کہ پاکستانی فضائی حدود میں آنے والے امریکی ڈرون مار گرا دیے جانے چاہییں۔

حافظ سعید نے، جن کے سر پر ایک کروڑ امریکی ڈالر کا انعام مقرر ہے، اسلام آباد میں دس جون کو جمعے کی نماز پڑھاتے ہوئے فوج سے مطالبہ کیا کہ پاکستان کی سرحد کے اندر آنے والے امریکی ڈرونوں کو مار گرا دیا جائے اور امریکہ کو ان کا جواب دیا جائے۔

ان کی یہ تقریر ایک ایسے وقت پر سامنے آئی ہے جب امریکہ اور پاکستان کے تعلقات گذشتہ ماہ بلوچستان میں طالبان کے سربراہ ملا اختر منصور کی امریکی ڈرون حملے میں ہلاکت کے بعدکشیدگی کا شکار ہیں۔

پاکستان میں اس ڈرون حملے کی بڑے پیمانے پرمذمت کی گئی تھیاور اسے پاکستان کی خودمختاری پر حملہ قرار دیا گیا تھا۔

اسلام آباد کی ایک مسجد میں جمعے کا خطبہ دیتے ہوئے حافظ سعید نے سینکڑوں افراد کے مجمعے سے خطاب کرتے ہوئے کہا: ’ہم فوج کے سربراہ سے درخواست کرتے ہیں اور فضائیہ کے سربراہ سے بھی کہتے ہیں کہ وہ اپنی ذمہ داری کا احساس کریں۔ اگر کوئی ڈرون پاکستانی سرزمین میں گھس آئے تو یہ آپ کی ذمہ داری ہے کہ اسے مار گرائیں اور اس کا جواب دیں۔ انشااللہ 20 کروڑ لوگ آپ کے پیچھے کھڑے ہونے کے لیے تیار ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption انڈیا میں حافظ سعید کے خلاف مظاہرہ

انھوں نے مزید کہا: ’پاکستانی حکام، حکومت، پاکستانی فوج، پاکستانی عوام، پاکستانی سیاست دان اور حزبِ اختلاف ہر کسی کو متحد ہو کر امریکہ کو پیغام دینا چاہیے کہ ہم آپ کے ڈرونوں کے خلاف ہر قسم کی جارحانہ کارروائیاں کر سکتے ہیں، اور ہم انشااللہ اپنے ملک کا دفاع کریں گے۔ یہ پیغام وقت کی ضرورت ہے۔‘

انھوں نے امریکی حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا کہ وہ ایٹمی ٹیکنالوجی کے معاملے پر انڈیا کے ساتھ گٹھ جوڑ کر رہی ہے۔ ’انھوں (امریکہ اور انڈیا) نے پاکستان کے خلاف بہت خطرناک سازشیں تیار کی ہیں۔ ہمیں اس وقت امریکہ اور انڈیا کو بہت سخت پیغام دینا چاہیے۔ یہ بات ظاہر ہو چکی ہے کہ امریکہ پاکستان کے خلاف انڈیا کا ساتھ دے رہا ہے۔ میرے خیال سے یہ اچھی بات ہے کیوں کہ اس سے اندر کا زہر باہر آ گیا ہے۔‘

انڈیا نے پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ حافظ سعید کے خلاف کارروائی کرے۔ حافظ سعید ممنوعہ تنظیم لشکرِ طیبہ کے بانی ہیں جس پر الزام لگتا رہا ہے کہ وہ انڈیا کے خلاف کارروائیاں کرتی رہی ہے۔

حافظ سعید اب جماعۃ الدعوہ تنظیم کے سربراہ ہیں۔ یہ تنظیم21 مئی کو ہونے والے ڈرون حملے کے خلاف ملک بھر میں احتجاج کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

گذشتہ برس نومبر میں پاکستان نے جماعۃ الدعوہ جیسی تنظیموں کی میڈیا کوریج پر پابندی لگا دی تھی جن کے شدت پسند گروہوں سے تعلقات ہیں۔ اس سے پہلی بار سرکاری طور پر یہ تسلیم کیا گیا تھا کہ یہ دراصل لشکرِ طیبہ کی شاخ ہے۔

اسی بارے میں