سشما سوراج کا بیان حیران کن ہے، وزیر داخلہ نثار علی

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

پاکستان کے وزیرِداخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ بھارتی وزیرِ خارجہ سشما سوراج کا پاک بھارت تعلقات کے حوالے سے بیان حیران کن ہے۔

چوہدری نثار کے بقول اگر سشما سوراج پاک بھارت تعلقات میں بہتری لانے میں سنجیدہ ہیں تو انھیں گھما پھرا کر بات کرنے اور سیاسی پوائنٹ سکورنگ سے گریز کرنا چاہیے۔

پاکستان کے سرکاری خبر رساں ادارے اے پی پی کے مطابق سشما سوراج کی جانب سے اتوار کو دیے جانے والے بیان پر اپنا ردِعمل دیتے ہوئے پاکستانی وزیرِ داخلہ کا کہنا تھا کہ سشما سوراج کو کھل کر بیان کرنا چاہیے کہ وہ کون سی طاقتیں ہیں جو پاک بھارت تعلقات میں بہتری نہیں چاہتیں۔

چوہدری نثار کا مزید کہنا تھا آر ایس ایس اور شیو سینا جیسی انتہا پسند تنظیموں کے بھارتی حکومت سے قریبی مراسم دونوں ممالک کے مابین تعلقات میں بہتری لانے میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیں۔

انھوں نے سوال اٹھایا کہ اگر بھارتی حکوت پاکستان سے تعلقات بہتر کرنے میں سنجیدہ ہے تو اس نے ایک طویل عرصے سے مذاکرات کے دروازے کیوں بند کیے ہوئے ہیں۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ جہاں تک بھارت کی حکومت کا تعلق ہے اُس کی پاکستان سے دوستی کی پالیسی بھارتی وزیرِاعظم نریندرہ مودی کی امریکی کانگریس میں کی جانے والے تقریر کے ہر لفظ سے واضح ہوتی ہے۔

وزیرِ داخلہ کے مطابق پاکستان کے وزیرِاعظم کے کسی ملک یا کسی سربراہِ مملکت سے تعلقات پاکستان کے مفاد سے وابستہ ہیں۔ بھارتی وزیرِ خارجہ کی جانب سے ان تعلقات کو ذاتی رنگ دینا غیر مناسب ہے۔

اسی بارے میں