ضلع کیچ سے تین افراد کی تشدد زدہ لاشیں برآمد

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع کیچ سے تین افراد کی تشددزدہ لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔ تینوں لاشیں کپکپار کراس کے علاقے سے برآمد کی گئیں۔

٭پانچ مغویوں کی لاشیں برآمد

کیچ میں انتظامیہ کے ذرائع کے مطابق مارے جانے والے تینوں افراد کی شناخت ہوئی ہے جن کا تعلق ضلع کیچ کے علاقے دشت سے تھا۔

ان ذرائع نے بتایا کہ تینوں افراد کوچند ماہ قبل نامعلوم مسلح افراد نے اغوا کیا تھا۔

ایران سے متصل ضلع کیچ کا تعلق بلوچستان کے ان علاقوں میں ہوتا ہے جہاں بد امنی کے واقعات تسلسل کے ساتھ رونما ہورہے ہیں۔ حالات کی خرابی کے بعد سے کمی و بیشی کے ساتھ اس ضلع سے بھی تشدد زدہ لاشوں کی برآمدگی کا سلسلہ جاری ہے۔

تاہم کپکپار کراس سے جن تین افراد کی لاشیں برآمد کی گئی ہیں ان کے بارے میں ایسی اطلاعات ہیں کہ ان کا تعلق ماضی میں ایک عسکریت پسند تنظیم سے رہا ہے۔ اور انھوں نے چند ماہ قبل عسکریت پسندی ترک کرکے سرکاری حکام کے سامنے ہتھیار ڈالے تھے۔

ان تینوں افراد کو ہلاک کرنے کی ذمہ داری کالعدم عسکریت پسند تنظیم بلوچستان لبریشن فرنٹ نے قبول کی ہے۔

تنظیم کے ترجمان کی جانب سے مقامی میڈیا کو جاری کیے جانے والے ایک بیان کے مطابق ان افراد کا تعلق ماضی میں بی ایل ایف ہی سے تھا ۔ ترجمان نے دعویٰ کیا کہ تینوں افراد نے چھ ماہ قبل ہتھیار ڈالے تھے اور مبینہ طور پربلوچ قومی جدوجہد کے خلاف کام کرنے کی حامی بھری تھی۔ تاہم انتظامیہ کے ذرائع نے ماضی میں ان افراد کی کسی عسکریت پسند تنظیم سے تعلق اور ہتھیار ڈالنے کے اقدام کی تصدیق نہیں کی۔

اسی بارے میں