’ملک کو مذہبی اور نسلی امتیاز سے محفوظ بنائیں گے‘

تصویر کے کاپی رائٹ bbc

وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف نے داخلی سلامتی کا جائزہ لینے کے لیے بلائے گئے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کو مذہبی اور نسلی امتیاز سے محفوظ بنائیں گے۔

اجلاس میں داخلی سکیورٹی اور نیشنل ایکشن پلان کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں وزیر داخلہ، وزیر خزانہ، قومی سلامتی کے مشیر ناصر خان جنجوعہ، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل رضوان اختر، ڈی جی انٹیلیجنس بیورو آفتاب سلطان اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

وزیر اعظم نے کہا انتہا پسندانہ نظریات عالمی امن کے لیے خطرہ ہیں اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کا نقصان سب سے زیادہ ہوا ہے۔

انھوں نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی کو سراہا اور کہا کہ ان کے باعث شدت پسندوں کے لیے جگہ تنگ ہوتی جا رہی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ نیشنل ایکشن پلان اور آپریشن ضرب عضب کے باعث ملک کی سکیورٹی میں بہتری آئی ہے۔

میاں نواز شریف نے کہا کہ وفاقی حکومت معلومات کے تبادلے اور کوآرڈینیشن کو بہتر بنا کر شدت پسندی کے خلاف کارروائیوں میں صوبائی حکومتوں کی مدد کرے گی۔

اسی بارے میں