مظفر آباد میں بس کھائی میں گرنے سے 15 ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption پاکستان آرمی نے موقعے پر پہنچ کر امدادی کاموں میں حصہ لیا

پاکستان کے زیرِ اہتمام کشمیر کے دارالحکومت مظفر آباد میں حکام کے مطابق ایک بس کے کھائی میں گرنے سے کم سے کم 15 افراد ہلاک اور چار زخمی ہو گئے۔

حکام کے مطابق یہ حادثہ جمعے کی رات پیش آیا۔

٭ باراتیوں کی بس کھائی میں گرنے سے 17 ہلاکتیں

٭ مری: دو بسیں کھائی میں گرنے سے نو ہلاک

اسسٹنٹ کمشنر مظفر آباد فدا شاہ نے بی بی سی کے شیراز حسن کو بتایا کہ بس حادثے میں کم سے کم 15 افراد ہلاک اور چار زخمی ہوئے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اب تک چار لاشیں برآمد ہوئی ہیں جبکہ باقی افراد کی تلاش کے لیے آپریشن جاری ہے۔

فدا شاہ کے مطابق زخمی ہونے والے افراد کو سی ایم ایچ ہسپتال مظفر آباد منقتل کیا گیا ہے جبکہ بس کے کنڈکٹر کو پولیس نے حراست میں لے لیا ہے۔

اسسٹنٹ کمشنر مظفر آباد نے بتایا کہ بس میں 19 افراد سوار تھے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق یہ حادثہ مظفر آباد سے 45 کلو میٹر شمال میں نوسیری کے علاقے میں پیش آیا جہاں یہ بس دریائے نیلم میں جاگری۔

مقامی حکومت نے ایک اہلکار اشفاق گیلانی نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ حادثہ تیز رفتاری کے باعث آیا۔

پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں اس سے پہلے بھی سڑک حادثات ہوتے رہے ہیں۔

جون سنہ 2011 میں ایک نجی سکول کی وین نہر میں گرنے سے 12 بچے ہلاک ہو گئے تھے جب کہ جون سنہ 2013 میں ایک مسافر بس دریائے نیلم میں جا گری تھی جس کے نتیجے میں 22 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں