BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Thursday, 08 June, 2006, 17:47 GMT 22:47 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
سٹیل ملز کا اصل خریدار کون؟
 

 
 
سٹیل مل
سٹیل مل کے ساتھ ساڑھے چار ہزار ایکڑ زمین بھی فروخت کی گئی ہے
پاکستان کے سب سے بڑے صنعتی یونٹ پاکستان سٹیل ملز کا اصل خریدار کون ہے؟ التوارقی اور عارف حبیب گروپ یا ماریشس کی ایک کمپنی، پی ایس ایم سی ایس پی وی؟

پاکستان سٹیل کی نجکاری کے بعد بعض دستاویزات کی روشنی میں یہ سوال سامنے آیا ہے کہ دراصل مل کس نے خریدی ہے۔

نجکاری کمیشن نے پاکستان سٹیل کی نجکاری سے پہلے اور بعد میں ملازمین اور قومی اسمبلی کے اراکین کو جو خطوط لکھے تھے ان میں بولی دینے والے جن اداروں کے نام ظاہر کیئےگئے تھے اور حصص کی فروخت کا جو معاہدہ ہوا ہے ان میں اختلاف پایا جاتا ہے۔

نجکاری کمیشن نے اکتیس مارچ کو نجکاری کے وقت بتایا تھا کہ ایک تین رکنی کنسورشیم نے سب سے زیادہ بولی دے کر سٹیل مل کے 75 فیصد یا ایک ارب 68 کروڑ سے زیادہ حصص خرید لیئے ہیں۔

اس کنسورشیم میں سعودی عرب کی ایک کمپنی التوراقی گروپ، پاکستان کا عارف حبیب گروپ اور روس کی کمپنی میگنیٹوگورک شامل تھے۔

 دستاویز کے مطابق ماریشس میں رجسٹرڈ کمپنی پی ایس ایم سی ایس پی وی، اے ٹی جی ہولڈنگ اور ایم ایم کے ہولڈنگ نے مل کر بنائی ہے اور اس دستاویز کی شق 6 ( s ) کے مطابق اس کے ’آتھرائزد کیپٹل‘ اے ٹی جی ہولڈنگ اور ایم ایم کے ہولڈنگ کے دو حصص جاری کیئے گئے ہیں جو ایک، ایک ڈالر کے ہیں یعنی ان دونوں کمپنیوں کی کل مالیت چار امریکی ڈالر ہے۔
 

بی بی سی کو اپنے ذرائع سے حصص کی فروخت کی دستاویز کی جو نقول ملی ہیں ان کے مطابق فروخت کیئے گئے اسّی فیصد حصص پی ایس ایم سی ایس پی وی ماریشس نے لیئے ہیں جبکہ باقی بیس فیصد حصص عارف حبیب سکیورٹیز لمیٹڈ اور عارف حبیب ولد حبیب حاجی شکور نے لیئے ہیں۔ اس معاہدے میں التوارقی گروپ کا نام کسی بھی جگہ شامل نہیں ہے جبکہ روسی کمپنی کا نام ضمانتی کی فہرست میں موجود ہے۔

اسی طرح عارف حبیب ولد حبیب حاجی شکور نے ایک فرد کی حیثیت سے دس فیصد حصص خریدے ہیں جبکہ عارف حبیب سکیورٹیز نے بھی دس فیصد حصص لیئے ہیں ۔

دستاویز کے مطابق ماریشس میں رجسٹرڈ کمپنی پی ایس ایم سی ایس پی وی، اے ٹی جی ہولڈنگ اور ایم ایم کے ہولڈنگ نے مل کر بنائی ہے اور اس دستاویز کی شق 6 ( s ) کے مطابق اس کے ’آتھرائزد کیپٹل‘ اے ٹی جی ہولڈنگ اور ایم ایم کے ہولڈنگ کے دو حصص جاری کیئے گئے ہیں جو ایک، ایک ڈالر کے ہیں یعنی ان دونوں کمپنیوں کی کل مالیت چار امریکی ڈالر ہے۔

نجکاری کمیشن نے اکتیس مارچ کو پاکستان اسٹیل ملز کے پچھہتر فیصد حصص اکیس ارب اڑسٹھ کروڑ میں تین رکنی کنسورشیم کو بیچ دیئے تھے اور اس کے ساتھ قریباً ساڑھے چار ہزار ایکڑ زمین بھی فروخت کی گئی ہے۔

 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد