BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Wednesday, 18 October, 2006, 15:35 GMT 20:35 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
مرزا کی پھانسی، بلیئر کی اپیل
 
مرزا طاہر حسین
مرزا طاہر حسین گزشتہ اٹھارہ سال سے جیل میں ہیں
برطانوی وزیراعظم ٹونی بلیئر نے ٹیکسی ڈرائیور کے قتل کے جرم میں سزائے موت پانے والے برطانوی شہری مرزا طاہر کی پھانسی رکوانے کے لیے پاکستانی صدر پرویز مشرف سے بات چیت کی ہے۔

اٹھارہ برس قبل ٹیکسی ڈرائیور کے قتل کے جرم میں سزائے موت کے منتظر برطانوی شہری مرزا طاہر حسین کو یکم نومبر کو پھانسی دی جائے گی۔

ٹونی بلیئر نے بتایا کہ طاہر مرزا کی پھانسی کا معاملہ انہوں نے صدر مشرف کے حالیہ برطانیہ دورے پر اٹھایا تھا۔

دریں اثناء پرِنس چارلس سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ پاکستان کا دورہ معطل کردیں کیوں کہ اسی وقت طاہر مرزا کو پھانسی دی جانی ہے جب وہ پاکستان میں ہوں گے۔

ٹونی بلیئر نے پرِنس چارلس کے دورے کے بارے میں کچھ کہنے سے انکار کردیا لیکن ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ ’اس مرحلے پر بھی‘ مرزا طاہر کی پھانسی رکوانے کا معاملہ ہے۔ بلیئر نے کہا: ’ایک صدر کے پاس کچھ کرنے کی ایک حد ہے لیکن میں امید کرتا ہوں کہ وہ (صدر مشرف) اپنے اختیار کا استعمال کریں گے۔ اور ہم آخری وقت تک کوششیں کرتے رہیں گے۔‘

 ایک صدر کے پاس کچھ کرنے کی ایک حد ہے لیکن میں امید کرتا ہوں کہ وہ (صدر مشرف) اپنے اختیار کا استعمال کریں گے۔ اور ہم آخری وقت تک کوششیں کرتے رہیں گے۔
 
برطانوی وزیراعظم ٹونی بلیئر
پرِنس چارلس اور ان کی اہلیہ انتیس اکتوبر تا تین نومبر پاکستان کا دورہ کررہے ہیں اور صدر مشرف سے بھی ملاقات کرنے والے ہیں۔

لیڈز کے ایم پی گریگ ملہولینڈ نے کہا ہے کہ پرِنس چارلس کے دورے کے دوران مرزا طاہر کی پھانسی مانسٹرس یعنی’خطرناک‘ بات ہوگی۔ انہوں نے پرِنس چارلس کو خط لکھ کر اپیل کی ہے کہ وہ اپنا دورۂ پاکستان معطل کردیں۔

اڈیالہ جیل کے حکام نے مرزا طاہر حسین کی سزا پر عملدرآمد کی نئی تاریخ مقرر کرنے کے لیئے اکتوبر کے پہلے ہفتے میں متعلقہ سیشن جج کو درخواست دی تھی جس پر یکم نومبر کی تاریخ مقرر ہوئی ہے۔

اڈیالہ جیل کے حکام نے بی بی سی اردو کو بتایا کہ مرزا طاہر کی سزا پر عملدرآمد کے خلاف لیا جانے والا تیسرا حکمِ امتناعی بھی یکم اکتوبر کو غیر مؤثر ہوگیا تھا جس کے بعد سزا پر عملدرآمد کی نئی تاریخ مانگی گئی تھی۔

ان کے مطابق ملزم کے بلیک وارنٹ پہلے ہی جاری کیئے جا چکے ہیں اور عدالت کی جانب سے تاریخ ملنے کے بعد اب ملزم اور مدعی کے اہلِ خانہ کو بذریعہ خط مطلع کر دیا گیا ہے۔ حکام کے مطابق پھانسی کے لیئے صبح ساڑھے چھ بجے کا وقت مقرر کیا گیا ہے۔

 
 
اسی بارے میں
بیرونی لِنک
بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد