BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Friday, 08 June, 2007, 16:12 GMT 21:12 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
حماد رضا قتل: دو مزید افراد گرفتار
 

 
 
حماد رضا
حماد رضا کے قتل کے الزام میں زیر حراست افراد کی تعداد چھ ہوگئی ہے
سپریم کورٹ کے ایڈیشنل رجسڑار حماد رضا کے قتل کے الزام میں پولیس کا کہنا ہے کہ انہوں نے جمعرات کے روز مزید دو افراد کو گرفتار کیا ہے اور انہیں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا ہے۔

تازہ گرفتاریوں کے بعد حماد رضا کے قتل کے الزام میں زیر حراست افراد کی تعداد چھ ہوگئی ہے۔


پولیس کا کہنا ہے کہ حماد رضا کے قتل کے الزام میں مطلوب تمام مشتبہ افراد اب پولیس کی حراست میں ہیں۔

جمعرات کے روز گرفتار کیے جانے والے محمد ممتاز اور مشتاق حسین سگے بھائی ہیں اور ان کا تعلق بھی دیگر چار گرفتار افراد کی طرح وادی نیلم سے ہے۔

اسلام آباد کے ڈپٹی انسپکڑ جنرل پولیس شاہد ندیم بلوچ نے کہا کہ یہ دو افراد ان چار لوگوں میں شامل تھے جو حماد رضا کے گھر میں داخل ہوئے تھے۔

سپریم کورٹ کے ایڈیشنل رجسڑار سید حماد رضا کو اس ماہ کی چودہ تاریخ کو اسلام آباد میں ان کی رہائش گاہ میں گھس کر چار نامعلوم افراد نے گولی مار کر ہلاک کردیا تھا۔

مقتول کے خاندان والوں کا کہنا ہے یہ ٹارگٹ کلنگ تھی جبکہ پولیس کا اصرار ہے کہ یہ ڈکیتی ہے۔

مقتول کے خاندان والوں کا کہنا ہے یہ ٹارگٹ کلنگ تھی

حماد رضا کا قتل ایک ایسے مرحلے پر ہوا تھا جب سپریم کورٹ میں چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کے مقدمے کی سماعت شروع ہو چکی تھی اور ان کے وکلاء کے بقول مرحوم ان کے اہم گواہ تھے۔

پولیس افسر شاہد ندیم کا کہنا ہے کہ جمعرات کوگرفتار ہونے والے دو افراد میں سے ایک پولیس کو دو ہزار پانچ کے ایک مقدمے میں مطلوب تھا اور وہ اشہاری ملزم تھا اور یہ کہ پولیس نے اس کے خلاف پہلے سے ہی گرفتاری کے وارنٹ حاصل کر رکھے تھے۔

اس سے قبل پاکستانی حکام نے گزشتہ ماہ پانچ افراد کو حراست میں لیا تھا جن میں چار کا تعلق پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں وادی نیلم کے گاؤں نیلم سے تھا اور ان میں تین سگے بھائی ہیں اور پانچویں شخص کا تعلق مظفرآباد سے ہے۔

ان میں سے ضیاء الدین نامی شخص کو کوئی دو ہفتے حراست میں رکھنے کے بعد دو جون کو رہا کر دیا گیا تھا۔ انہوں نے اپنی رہائی کے بعد یہ الزام عائد کیا ان کو حراست کے دوران مارا پیٹا گیا اور ان پر دباو ڈالا جارہا تھا کہ وہ یہ قبول کریں کہ انہوں نے قتل اور ڈکیتی کی ہے اور یہ بھی کہ ان کے دو بھائیوں نے بھی ڈکیتی اور قتل کیا ہے۔

قاتل ڈاکو نہیں تھے بلکہ وہ صرف قتل کرنے آئے تھے: حماد رضا کے والد

ضیاء الدین حماد رضا کے قتل کے الزام میں زیر حراست شریف الدین اور بشیرالدین کے بھائی ہیں۔

پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کی پولیس نے ضیاء الدین کی گرفتاری کے بارے میں مکمل لاعلمی کا اظہار کیا تھا اور اسلام آباد کی پولیس بھی خاموش رہی۔ لیکن اب اسلام آباد کے ڈپٹی انسپکڑ جنرل پولیس شاہد ندیم کا کہنا ہے کہ انہوں نے ضیاء الدین کو حماد رضا کے قتل کے الزام میں گرفتار نہیں کیا تھا بلکہ وہ دو ہزار پانچ کے ایک مقدمے میں پولیس کو مطلوب تھے۔

وزیر داخلہ آفتاب احمد شیر پاؤ نے گزشتہ ماہ کے آخر میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے زیر حراست چار افراد کے بارے میں کہا تھا کہ ان کو ماضی کے جرائم کے سلسلے میں جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے گرفتار کیا تھا۔

لیکن ان کے خاندان والوں کا کہنا ہے کہ ان کے عزیز بے گناہ ہیں اور وقوعے کے روز وہ اپنے گھروں میں موجود تھے۔

 ڈپٹی انسپکڑ جنرل پولیس شاہد ندیم بلوچ کا کہنا ہے کہ انہوں نے مقتول کے والد کو ملزمان کی شناخت کے لیے متعدد بار رابط کیا لیکن ان کا کہنا تھا کہ ان کی صحت ناساز ہے اور جونہی ان کی صحت اجازت دے گی وہ ملزمان کی شناحت کے لیے اسلام آباد آئیں گے
 

مقتول حماد رضا کے والد امجد حسین پولیس کے دعوے پر شک کا اظہار کرچکے ہیں کہ اان کے بیٹے کے قاتل پکڑے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ پتہ نہیں کہ وہ اصلی ملزم ہیں یا نہیں البتہ یہ واضع ہے کہ قاتل ڈاکو نہیں تھے بلکہ وہ صرف قتل کرنے آئے تھے۔

مقتول کے خاندان والوں نے ابھی تک زیر حراست افراد کی شناخت بھی نہیں ہوئی ہے۔

ڈپٹی انسپکڑ جنرل پولیس شاہد ندیم بلوچ کا کہنا ہے کہ انہوں نے مقتول کے والد کو ملزمان کی شناخت کے لیے متعدد بار رابط کیا لیکن ان کا کہنا تھا کہ ان کی صحت ناساز ہے اور جونہی ان کی صحت اجازت دے گی وہ ملزمان کی شناحت کے لیے اسلام آباد آئیں گے۔

ڈی آئی جی شاہد ندیم نے کہا کہ ابھی یہ معلوم نہیں کہ اس قتل کے محرکات کیا تھے۔

 
 
کراچی (فائل فوٹو)’صدر کی منطق‘
کراچی میں دوسروں کو سیاست کی اجازت نہیں؟
 
 
حماد رضا قتل
تحقیقات ہائی کورٹ کے حوالے: سپریم کورٹ
 
 
’ٹارگٹ کلنگ ہے‘
حماد کو نشانہ بنا کر قتل کیا گیا ہے: اہلیہ
 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد