BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Wednesday, 07 November, 2007, 03:33 GMT 08:33 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
’ہم پابندی قبول نہیں کریں گے‘
 

 
 
صحافیوں کی مذمت
جلسے کے وقت پریس کلب کے باہر بھاری تعداد میں پولیس موجود تھی
صحافیوں نے منگل کو کراچی پریس کلب میں ایک احتجاجی جلسہ منعقد کیا جس میں ایک متفقہ قرارداد منظور کرتے ہوئے نجی ٹی وی چینلز کے دکھائے جانے پر بندش، صحافیوں کی گرفتاری اور ان پر تشدد، اور ملک میں ایمرجنسی کے نفاذ کی مذمت کی گئی۔

مقررین نے احتجاجی جلسہ سے خطاب میں کہا کہ یہ جلسہ صحافیوں کی احتجاجی تحریک کا آغاز ہے اور وہ آزادئ صحافت اور آزادئ اظہار کے حصول تک اپنی پرامن جدوجہد جاری رکھیں گے۔

صحافی
صحافی پابندیوں کے خلاف ملک گیر تحریک چلانا چاہتے ہیں

کے یو جے یعنی کراچی یونین آف جرنلسٹس کے صدر شمیم الرحمٰن نے کہا کہ حکومت کی جانب سے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر لگائی گئی ملک گیر پابندی کی مذمت کرنے کے لیے یہ اجلاس بلایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس اجلاس کا مقصد صحافیوں کو ان پابندیوں کے خلاف احتجاجی تحریک چلانے کے لیے تیار کرنا بھی ہے اور اسی طرح کے اقدامات صحافی تنظیمیں ملک کے دیگر حصوں میں کریں گی تاکہ یہ تحریک ملک گیر سطح پر چلائی جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ ’ہم گرفتاریوں سے نہیں ڈرتے اور ہم ایمرجنسی کو قبول نہیں کرتے، ہم چاہتے ہیں کہ ایمرجنسی کا فوری طور پر خاتمہ ہو کیونکہ میڈیا پر پابندی ایمرجنسی کے نفاذ کے سبب ہی لگائی گئی ہے۔‘

شمیم الرحمٰن نے کہا کہ حکومت کے غلط اقدامات کی وجہ سے جس طرح دہشت گردی میں اضافہ ہوا ہے، سیاسی آزادی سلب ہوئی ہے، بے روزگاری بڑھی ہے یہ سب حقائق میڈیا دنیا پر عیاں کر رہا ہے اور یہ وجوہات بھی میڈیا پر پابندی کا سبب بنی ہیں۔

صحافی
وہ فوٹوگرافر جنہیں پولیس گرفتار کر کے لے گئی تھی

انہوں نے کہا کہ ’آزادئ اظہار اور آزادئ صحافت ہر ایک کا حق ہے اور ہم اس پر پابندی قبول نہیں کریں گے اور ہم جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں اور بغیر جمہوریت کے آزادئ صحافت بے معنی ہوتی ہے۔‘

صحافیوں اور وکلاء پر تشدد اور گرفتاری پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان اقدامات سے ظاہر ہوتا ہے کہ حکومتی ارکان اپنا دماغی توازن کھو چکے ہیں اور ان میں برداشت کا مادہ ختم ہوچکا ہے اور حکومت ہر قسم کی مزاحمت کو تشدد سے کچلنا چاہتی ہے۔

اے ٹی جے یعنی ایسوسی ایشن آف ٹی وی جرنلسٹس کے صدر جاوید صبا نے کہا کہ صحافیوں پر تشدد اور میڈیا پر پابندی کوئی نئی بات نہیں یہ پہلے بھی ہوتا رہا ہے لیکن جس طرح پیر کو پولیس نے صحافیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا اور پھر ان پر سنگین الزامات کے تحت مقدمات قائم کیے یہ اس بات کا اشارہ ہے کہ حکومت میڈیا کے خلاف کسی بڑے کریک ڈاؤن کا ارادہ رکھتی ہے اور جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

جلسہ سے کراچی پریس کلب کے صدر صبیح الدین غوثی، سیکریٹری امتیاز خان فاران، منہاج برنا، ادریس بختیار اور دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر پولیس سے رہائی پانے والے پانچ پریس فوٹوگرافرز بھی موجود تھے جنہیں پولیس نے پیر کو پریس کلب کے سامنے سے گرفتار کیا تھا۔ ان کی گرفتاری اس وقت عمل میں آئی تھی جب وہ سول سوسائٹی کے اراکین کی جانب سے احتجاجی مظاہرے کی تصاویر لے رہے تھے۔

دوسری جانب کراچی پریس کلب کے باہر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی اور صحافیوں کو خبردار کیا گیا تھا کہ اگر وہ احتجاجی جلسہ کے بعد جلوس کی صورت میں کراچی پریس کلب کے احاطہ سے باہر نکلے تو ان کو گرفتار کر لیا جائے گا۔

 
 
’جدوجہد کرتے رہیں‘
جسٹس چودھری کے بقول ایمرجنسی غیر آئینی
 
 
چیف جسٹس صبیح الدین احمدعہدے پر برقرار ہوں
برطرفی کی اطلاع نہیں ملی: جسٹس صبیح الدین
 
 
جسٹس خلیل رمدےاپنے کیے پر فخر ہے
فکر ججی کی نہیں ملک کی ہے: جسٹس رمدے
 
 
رپورٹروں سےاپنے رپورٹروں سے
ایمرجنسی کا دوسرا دن، لمحہ بہ لمحہ صورتحال
 
 
جب ایمرجنسی لگی
ایمرجنسی کا دن، لمحہ بہ لمحہ صورتحال
 
 
اخباراخبار کیا کہتے ہیں؟
ڈھکے چھپے الفاظ میں ایمرجنسی پر تنقید
 
 
بی بی سی اردو: خصوصی پروگرامخصوصی نشریات
ایک گھنٹے کا’جہاں نما‘ اور خصوصی پروگرام
 
 
اسی بارے میں
پی سی او ہائی کورٹ میں چیلنج
06 November, 2007 | پاکستان
میڈیا پر پابندیاں مزید سخت
03 November, 2007 | پاکستان
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد