کشمیر میں انڈین فوج کے سربراہ کی فوجی دستوں سے ملاقات

دلبیر سنگھ تصویر کے کاپی رائٹ PTI
Image caption جنرل دلبیر سنگھ نے پاکستانی سرحد سے متصل علاقوں میں انڈین فوج کی تیاریوں کا جائزہ بھی لیا ہے

انڈین میڈیا کی خبروں کے مطابق بھارتی فوج کے سربراہ جنرل دلبیر سنگھ نے لائن آف کنٹرول پر مبینہ سرجیکل سٹرائیک کرنے والے فوجی دستے سے ملاقات کی ہے اور سرحدی علاقوں میں فوجی تیاریوں کا بھی جائزہ لیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق انڈیا کے اس دعوے کے بعد کہ اس نے لائن آف کنٹرول کے اس پار سرجیکل سٹرائیک کی ہے انڈین فوجی سربراہ کا کشمیر کا یہ پہلا دورہ ہے۔

اخبار 'دی انڈین ایکسپریس' نے اپنی ایک رپورٹ میں ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ انڈین فوج کے سربراہ جنرل دلبیر سنگھ نے کنٹرول لائن پر 'سرجیکل سٹرائیک' کرنے والے فوجی دستوں سے ملاقات کی ہے۔

اخبار کے کے مطابق جنرل دلبیر سنگھ نے پاکستانی سرحد سے متصل علاقوں میں انڈین فوج کی تیاریوں کا جائزہ بھی لیا ہے۔

انھوں نے ادھم پور میں مختلف کمانڈروں سے ملاقات کی اور موجودہ سکیورٹی کی صورت حال کا جائزہ لیا۔

اخبار کی صفحہ اول پر یہ سرخی ہے کہ فوجی سربراہ نے شمالی کمانڈ کے ہیڈ کوارٹر میں اس دستے سے ملاقات کی جس نے مبینہ سرجیکل آپریشن میں حصہ لیا تھا۔

'انڈین ایکسپریس' نے اپنے پہلے صفحے پر سرحد سے متصل دیہی علاقوں میں پھیلنے والی کشدیگی کا ذکر بھی کیا ہے۔ اخبار نے ان خاندانوں کی تصاویر اور حالات بھی شائع کیے ہیں جنھیں سرحد پر کشیدگی کی وجہ سے اپنے گاؤں چھوڑنے پڑ رہے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق ایسے لوگ جنگ سے زیادہ پریشان اپنی فصل کے تعلق سے ہیں جو اس وقت کٹنے کے لیے تیار ہے اور دہشت زدہ کچھ خاندان تو اپنے ساتھ مویشی بھی لے کر بھاگ رہے ہیں۔