انڈین چینل این ڈی ٹی وی پر پابندی،ایڈیٹروں کی مذمت

پٹھانکوٹ تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption پٹھان کوٹ میں ہونے والے حملے میں سات انڈین فوجی اور چھ حملہ آور ہلاک ہوگئے تھے

بھارت کے مدیروں کی ایسوسی ایشن ایڈیٹرز گلڈ آف انڈیا نے پٹھان کوٹ کے فضائی اڈے پر حملے کی کوریج کے لیے ملک کے سرکردہ چینل این ڈی ٹی وی پر ایک دن کے لیے پابندی لگانے کے مرکزی وزارت اطلاعات اور نشریات کے فیصلے کی مذمت کی ہے۔

گلڈ نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پابندی کا فیصلہ واپس لے۔

وزارت کی ایک کمیٹی نے دو جنوری کو پٹھان کوٹ کے حملے کی نشریات کے تجزیے کے بعد این ڈی ٹی وی کے ہندی چینل پر نو نومبر کو ایک دن کی نشریات پر پابندی عائد کی ہے ۔ کمیٹی کا کہنا ہے کہ چینل نے حملے کے دوران فضائی اڈے سے متعلق انتہائی اہم عسکری معلومات نشر کیں جن سے حملہ آوروں کو مدد مل سکتی تھی ۔

حکومت کی طرف سے کسی نیوز چینل پر پابندی لگانے کا یا اپنی نوعیت کا پہلا واقع ہے ۔

این ڈی ٹی وی نے ایک بیان میں وزارت اطلاعات کے فیصلے کو ’شاکنگ ‘ قرار دیا ہے ۔ چینل نے وزارتی کمیٹی کے الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’اس کی کوریج پوری طرح متوازن تھی اور وہ انھیں معلومات کو نشر کر رہا تھا جو دوسرے چینل اور اخبارت بتا رہے تھے۔ یہ سبھی معلومات پہلے سے موجود تھیں ۔‘

ایڈیٹرز گلڈ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ چینل کی نشریات پر ایک دن کی پابندی لگانا میڈیا کی آزادی اور اس کے ذریعے عوام کی آزادی کی براہ راست خلاف ورزی ہے ۔ اس میں کہا گیا ہے کہ’ اپنی نوعیت کے اس انفرادی فیصلے سے لگتا ہے کہ حکومت نے میڈیا کے کام میں دخل دینے اور ان سے اتفاق نہ کرنے پر انہیں سزائیں دینے کا اختیار حاصل کر لیا ہے ۔‘

مدیروں کی انجمن نے جینل پرلگائی گئی پابندی فورآ ہٹانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کہ غیر ذمے دارانہ کوریج کے خلاف کاروائی کے کئی قانونی راستے ہیں ۔ بغیر قانونی قدم اٹھائے ہوئے اس طرح کی من مانی پابندی لگانا انصاف اور آزادی کے بنیادی اصولوں کی خلاف ورزی ہے ۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں