جے للیتا کی حالت ’تشویشناک‘، ہزاروں افراد ہسپتال کے باہر

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ماضی کی فلموں کی ہیروئن جے للیتا ریاست تمل ناڈو میں بہت مقبول ہیں

چینئی کے اپولو ہسپتال نے تمل ناڈو کی چیف منسٹر جے للیتا کی صحت کے بارے میں ایک بیان میں کہا ہے کہ ڈاکٹروں کی ایک ٹیم مسلسل ان کی نگرانی کر رہی ہے اور انھیں مصنوعی طریقے سے سانس دلایا جا رہا ہے۔

جے للیتا کو اتوار کی شب دل کا دورہ پڑا تھا۔ چنیئی میں ہزاروں فکرمند مداح اپنی رہنما کی صحت کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کے لیے ہسپتال کے باہر جمع ہیں۔ ریاستی حکومت نے ہسپتال کے باہر جمع مداحوں کو کنٹرول کرنے کے لیے سکیورٹی کا سخت انتظام کر رکھا ہے۔

گزشتہ رات بھارتی ذرائع ابلاغ میں جے للیتا کی موت کی غلط خبروں کے سبب ہسپتال کے باہر جھگڑے شروع ہو گئے تھے۔

اڑسٹھ سالہ جے للیتا کئی ماہ سے صحت کے مسائل سے دوچار ہیں اور ان کو آخری بار ستمبر میں دیکھا گیا تھا۔

سابق فلم سٹار جے للیتا چار مرتبہ تمل ناڈو کی وزیر اعلیٰ رہ چکی ہیں اور ان کے حامی انھیں ’اماں‘ کہہ کر پکارتے ہیں۔

خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ان کی صحت خراب ہونے سے ریاست میں بدامنی پھیل سکتی ہے۔

جے للیتا 22 ستمبر سے ہی اپولو ہسپتال میں زیرِ علاج ہیں اور چند ہی روز قبل انھوں نے بطورِ وزیر اعلیٰ اپنی ذمہ داریاں نائب وزیر اعلیٰ کو سونپی تھیں۔

دل کا دورہ پڑنے کے بعد جے للیتا کو اپولو ہسپتال کے انتہائی نگہداشت والے شعبے (آئی سی یو) میں منتقل کر دیا گيا۔

انتظامیہ نے لوگوں سے افواہوں سے پرہیز کے لیے کہا ہے اور واضح کیا ہے کہ سوموار کو سکول، کالج اور دفاتر کھلے رہیں گے اور امتحانات معمول کے مطابق ہوں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اپولو ہسپتال کے باہر جے للیتا کے حامیوں اور پرستاروں کی بھیڑ اکٹھی ہے اور ان کی صحتیابی کے لیے دعاگو ہے

تمل ناڈ کے گورنر سی ودیاساگر راؤ رات کو ہی ہسپتال پہنچے۔ جے للیتا کی کابینہ کے تقریباً تمام اراکین بھی رات کو ہسپتال پہنچ گئے تھے۔

انڈیا کے صدر پرنب مکھرجی نے بھی جے للیتا کے دل کا دورہ پڑنے کی خبر سن کر دکھ کا اظہار کیا ہے اور ان کی فوری صحتیابی کی دعا کی ہے جبکہ کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی سمیت ملک کے سرکردہ رہنماؤں نے بھی ان کی جلد صحت یابی کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔

اپولو ہسپتال کی شریک مینیجنگ ڈائریکٹر سنگیتا ریڈی کا کہنا ہے کہ ’ہمارے ڈاکٹر وزیر اعلیٰ کی طبیعت کا خاص خیال رکھ رہے ہیں۔ وہ ان کی صحت کی دیکھ بھال کی ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ ARUN SANKAR/AFP/GETTY IMAGES
Image caption ہسپتال کے باہر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں

ہسپتال کے ٹوئٹر ہینڈل سے بھی وزیر اعلیٰ کی صحت یابی کے لیے دعا کی اپیل کی گئی ہے۔

ماضی کی فلموں کی ہیروئن جے للیتا ریاست تمل ناڈو میں بہت مقبول ہیں اور وہ اہم علاقائی سیاسی جماعت ’اے آئی اے ڈی ایم کے‘ کی سربراہ ہیں۔

اُن کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ انتخابات کے دنوں میں لوگوں کو مختلف تحائف جیسے الیکٹرانک بلینڈر، بکریاں، سونا وغیرہ تقسیم کرتی ہیں۔

جے للیتا پر کئی بار بدعنوانی کے الزامات عائد کیے گئے ہیں اور سنہ 2014 میں کرپشن کے مقدمات میں کچھ عرصہ انھوں نے جیل میں بھی گزارا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں