'کریزی سمت' بوسوں کے باعث مشکل میں

تصویر کے کاپی رائٹ Youtube

انڈیا کے ایک یو ٹیوب کے صارف سمت ورما اس وقت ایک مشکل میں مبتلا ہو گئے جب انھوں نے مذاق کے طور پر عوامی جگہوں پر خواتین کے بوسے لیے اور بھاگ جانے کی ویڈیو یو ٹیوب پر اپ لوڈ کی۔

یو ٹیوب پر اس ویڈیو کے آنے کے بعد دہلی کی پولیس نے تحقیقات شروع کر دی ہیں اور جن خواتین کے بوسے ورما نے لیے تھے ان سے استدعا کی ہے کہ وہ پولیس سے تعاون کریں۔

تاہم سخت عوامی رد عمل کے بعد ورما نے معافی مانگی ہے اور اس ویڈیو کو ہٹا دیا ہے۔

ورما نے یہ ویڈیو ایسے وقت اپ لوڈ کی جب نئے سال کے موقعے پر بنگلور میں خواتین کو ہراساں کرنے کے واقعات سامنے آئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Youtube

سمت ورما کا یو ٹیوب پر 'کریزی سمت' کے نام سے چینل ہے جس کے ڈیڑھ لاکھ ممبران ہیں۔ ورما نے کہا کہ انھوں نے یہ ویڈیو مذاق کے طور پر بنائی تھی اور ان کا مقصد کسی کی دل آزاری کرنا نہیں تھا۔

لیکن پولیس ان کی اس وضاحت سے مطمئین نہیں ہے۔

پولیس کی ترجمان دیپندرا پاتھک نے پریس ٹرسٹ آف انڈیا کو بتایا 'یہ ویڈیو میڈیا کے ذریعے پولیس کے نوٹس میں آئی ہے۔ ہم نے ابتدائی تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ یہ ویڈیو فیس بک اور یو ٹیوب پر دستیاب ہے اور ہم اس کے چھان بین کر رہے ہیں۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں