انڈین ریاست بہار میں کشتی ڈوبنے سے 26 افراد ہلاک

پی ایم سی ہسپتال تصویر کے کاپی رائٹ PTI
Image caption اس حادثے میں دس افراد کو زندہ بچا لیا گیا ہے

انڈیا کی شمال مشرقی ریاست بہار کے دارالحکومت پٹنہ میں گنگا دریا میں کشتی ڈوبنے سے کم از کم 26 افراد کی ہلاکت ہوگئی ہے۔

پٹنہ کے سٹی ایس پی چندن کشواہا نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے اس حادثے کی تصدیق کی ہے۔

ایس پی کشواہا کے مطابق سبل پور ديارا سے پٹنہ گھاٹ کی جانب واپس آنے والی اس کشتی پر حد سے زیادہ افراد سوار تھے۔

اس حادثے سے دس افراد کو بچا لیا گیا ہے اور انھیں پٹنہ کے پی ایم سی ہسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق اس چھوٹی سی کشتی پر 40 سے زیادہ افراد سوار تھے اور یہ حادثہ سنیچر کی شام کو اس وقت پیش آيا جب یہ لوگ فصل کی کٹائی کا جشن منانے کے لیے کشتی سے پتنگ بازی دیکھنے گئے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PTI
Image caption وزیر اعلی نتیش کمار نے امدادی کام میں تندہی کا مظاہرہ کرنے کا حکم دیا ہے

حادثے پر بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے ٹویٹ کے ذریعے اپنے دکھ کا اظہار کیا ہے۔

نتیش کمار نے لکھا: 'دریائے گنگا میں ديارا کے پاس کشتی ڈوبنے کا واقعہ افسوسناک ہے۔ امدادی کام میں تیزی لانے کی ہدایت دی ہے۔'

وزیر اعلی نے ضلع انتظامیہ کو تمام مرنے والوں کے لواحقین کو فوری طور پر مالی مدد فراہم کرنے کا حکم دیا ہے۔

ریاست کے نائب وزیر اعلیٰ تیجسوی یادو نے بھی افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا: 'گنگا میں کشتی ڈوبنے کے واقعے سے غمزدہ ہوں۔ حکومت کی جانب سے متعلقہ محکموں کو امدادی کے کاموں میں تیزی لانے کی ہدایات دے دی گئی ہیں۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں