انڈیا: سکول بس کے حادثے میں کم از کم 15 بچے ہلاک ہوگئے

بس حادثہ تصویر کے کاپی رائٹ NAND KUMAR
Image caption اسدپور نامی گاؤں میں ایک ٹرک اور بچوں کو سکول لے جانی والی بس کی آمنے سامنے ہسے ٹکّر ہوگئی جس کی وجہ سے یہ حادثہ پیش آيا

انڈیا کی ریاست اتر پردیش کے ضلع ایٹہ کے علاقے علی گنج میں جمعرات کی صبح ہونے والے ایک حادثے میں کم از کم 15 بچے ہلاک اور تقریباً 45 شدید زخمی ہو گئے۔

انڈين میڈیا اور ٹی وی چینلز کے مطابق اس حادثے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد تقریباً 25 ہے۔

اسدپور نامی گاؤں میں ایک ٹرک اور بچوں کو سکول لے جانی والی بس کی آمنے سامنے سے ٹکّر ہوگئی جس کی وجہ سے یہ حادثہ پیش آيا۔

تصویر کے کاپی رائٹ NAND KUMAR
Image caption بس میں تقریبا پچاس بچے سوار تھے

ایٹہ کے ایڈیشنل پولیس سپرنٹنڈنٹ بسرجن سنگھ یادو نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ جائے حادثہ پر ہی دس بچے ہلاک ہوگئے تھے جبکہ زخمی ہونے والے دیگر درجنوں بچوں کو ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

انھوں نے بتایا کہ حادثے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد میں اضافے کا امکان ہے۔ بس میں سوار ہونے والے بچوں کی عمر چار سے 11 سال کے درمیان بتائی جا رہی ہے۔

پولیس حکام کے مطابق صبح آٹھ بجے شدید دھند کی وجہ سے یہ حادثہ ہوا۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے اس حادثے پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ ان کی جانب سے ایک ٹویٹ میں کہا گیا ہے کہ 'اس المناک حادثے سے انھیں شدید تکلیف پہنچی ہے۔'

تصویر کے کاپی رائٹ NAND KUMAR
Image caption حادثے کی خبر سنتے ہی لواحقین کے اہل خانہ جائے وقوعہ پر جمع ہونے شروع ہوگئے

دارالحکومت لکھنؤ میں پولیس کےایک سینیئر ترجمان راہل شری واستو نے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 15 بتائی ہے۔ ان کے مطابق حادثے میں تقریباً 45 افراد زخمی ہوئے ہیں اور ان میں سے 14 شدید زخمی ہیں۔

فی الحال تمام زخمیوں کو ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق اس حادثے میں بس کا ڈرائیور بھی موقع پر ہی ہلاک ہو گيا۔

کہرے اور دھند کی وجہ سے ضلعی انتظامیہ نے 21 تاریخ تک سکولوں کو بند رکھنے کا حکم دیا تھا لیکن اس کے باوجود سکول کیوں کھلا تھا، اس پر بھی سوال اٹھائے جا رہے ہیں۔

انڈیا ایک ایسا ملک ہے جہاں عالمی سطح پر سب سے زیادہ سڑک حادثے ہوتے ہیں اور تقریبا ہر چار منٹ میں ایک حادثہ پیش آتا ہے۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق 2015 میں 1،46000 افراد سڑک حادثے میں ہلاک ہوئے تھے۔

ماہرین کے مطابق اس طرح کے بیشتر حادثات بغیر احتیاط کی ڈرائیونگ، خراب سڑکوں اور پرانی گاڑیوں کے استعمال کی وجہ سے پیش آتے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں