افغان فوج کے اڈے پر طالبان کا حملہ، 43 فوجی ہلاک

افغان فوجی تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

افغانستان کے صوبہ قندھار میں فوج کے اڈے پر طالبان کے حملے میں کم از کم 43 افغان فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔

افغان وزارتِ دفاع کی طرف سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق یہ حملہ ضلع میوند میں بدھ کو رات گئے کیا گیا اور اس میں نو فوجی زخمی بھی ہوئے ہیں جبکہ چھ لاپتہ ہیں۔

وزارتِ دفاع کے ترجمان دولت وزیری کا کہنا ہے کہ یہ دو خودکش حملہ آوروں نے جو ہموی گاڑیوں پر سوار تھے، فوجی اڈے کو نشانہ بنایا۔

٭ افغانستان میں قیامِ امن کی خاموش کوشش

٭ ’دولتِ اسلامیہ افغانستان میں کیسے مضبوط ہوئی‘

٭ افغان فوجی اڈے پر حملہ، 130 سے زائد ہلاک

ان کا کہنا تھا کہ اس کے بعد مسلح حملہ آور فوجی اڈے میں گھس گئے اور انادھند فائرنگ کی۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ جوابی فائرنگ سے نو طالبان حملہ آور بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

خیال رہے کہ منگل کو بھی طالبان نے افغانستان کے مشرقی حصے میں سکیورٹی فورسز پر دو حملے کیے تھے جن میں 70 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

ان ہلاک شدگان میں سے بھی بیشتر کا تعلق سکیورٹی فورسز سے ہی تھا۔

خیال رہے کہ اپریل میں شمالی صوبے بلخ میں افغان فوجی اڈے پر ہونے والے ایک حملے میں 130 سے زائد فوجی ہلاک ہو گئے تھے جبکہ طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں