دیوالی کے موقع پر سشما کا پاکستانی مریضوں کو ویزے دینے کا اعلان

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption چند دنوں قبل انہوں نے اسلام اباد میں انڈین ہائی کمیشن کو کئی مریضوں کو ویزا جاری کرنے کی ہدایت کی تھی۔

انڈیا کی وزیر خارجہ سشما سوراج نے اعلان کیا ہے کہ ان تمام پاکستانی شہریوں کو ویزا دیا جائے گا جنھوں نے علاج کے لیے انڈیا آنے کی درخواست داخل کر رکھی ہے۔ سشما سوراج نے یہ اعلان ملک کے بڑے تہوار دیوالی کے موقع پر کیا ہے۔

سشما سوراج نے آج اعلان کیا ہے کہ ان پاکستانی مریضوں کو علاج کے لیے ویزا جاری کیا جائے گا جن کا علاج انڈیا میں ہو سکتا ہے اور جنھوں نے پہلے سے ویزا کے لیے درخواستیں دے رکھی ہیں۔ انھوں نے ایک ٹویٹر پیغام میں کہا 'دیوالی کے اس مبارک موقع پر انڈیا علاج کے ان تمام معاملات میں آج میڈیکل ویزا جارے کرے گا جو پہلے سے زیر غور ہیں۔'

پاکستان اور انڈیا کی سائبر دنیا میں دوستی

’ایسا لگ رہا ہے ویزا نہیں، جنت کا ٹکٹ مل گیا ہو‘

ان کے اس بیان کے بعد پاکستان کے کئی شہریوں نے ٹوئٹر کے ذریعے ان سے ویزا کے لیے اپیل کی ۔ان میں ایک پاکستانی لڑکی کی بھی اپیل شامل تھی جو دلی میں اپنے زیر علاج والد کی مدد کے لیے آنا چاہتی ہے ۔ ان کے والد کا لیور ٹرہنسپلانٹ کا آپریشن ہونے والا ہے۔ سشما سوراج نے اپنے جواب میں کہا کہ 'آپ انڈین سفارتخانے سے رابطہ قائم کریں آپ کو ویزا مل جائے گا۔'

چند دنوں قبل انھوں نے اسلام اباد میں انڈین ہائی کمیشن کو کئی مریضوں کو ویزا جاری کرنے کی ہدایت کی تھی۔ ان میں ایک بچہ بھی شامل تھا جو آنکھوں کے کینسر میں مبتلا ہے۔ کئی درخواستیں لیور ٹرانسپلاننٹ آپریشن کے لیے تھیں۔

انڈیا میں نجی ہسپتالوں میں علاج کی بہترین سہولیات موجود ہیں اور یوروپ اور دوسرے ترقی یافتہ ملکوں کے مقابلے علاج نسبتآ سستا ہونے کے سبب یوررپ ، افریقہ اور عرب ممالک سے ہزاروں کی تعداد میں میں لوگ علاج کے لیے انڈیا آتے ہیں۔

پچھلے کچھ سالوں میں بنگلہ دیش اور پاکستان سے بھی لوگ بڑی تعداد میں انڈیا آنے لگے ہیں۔ انڈیا نے میڈیکل ویزا یعنی علاج کے لیے آنے والوں کے لیے ویزا بہت آسان کر دیا ہے ۔لیکن سرحدوں پر کشیدگی کے بعد انڈیا نے پاکستانی شہریوں کو ویزا دینے پر پابندی عائد کر دی تھی۔ پاکستانی مریضوں کا آنا تقریـبآ بند ہو چکا ہے ۔ حالہ مہینوں میں وزیر خارجہ سشما سوراج کی براہ راست مداخلت کے بعد کئی بار کچھ پاکستانی شہریوں کو ویزا جاری کیۓ گئے۔

انڈیا اور پاکستان کے تعلقات کافی کشیدہ رہے ہیں۔ تلخ تعلقات کے سبب لوگوں کے آنے جانے پر بھی کافی اثر پڑا ہے۔ دونوں ملکوں کے درمیان مزاکرات بھی معطل ہیں۔ پچھلے دنوں دلی میں پاکستان کے نئے ہائی کمشنر مامور ہوئے ہیں۔

بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں حالات خراب ہونے کے بعد باہمی تعلقات مزید خراب ہوتے گئے ۔ بات چیت معطل ہونے اور انڈیا کی جانب سے بات چیت کی کوئی کوشش نہ کیے جانے سے تعلقات میں کوئی بہتری نہیں آ‎سکی ہے۔

آج ملک میں دیوالی کا بڑا تہوار منایا جا رہا ہے۔ اس موقع پر وزیر اعظم نریندر مودی انڈیا کے زیر انتظام کشمیر کے گریز سکٹر میں تھے۔ مودی نے وہیں فوجیوں کے ہمراہ دیوالی منائی۔

سرحد پر تعنیات فوجی دیوالی کے موقع پر سرحدوں پر چراغ جلاتے ہیں۔ انڈین فوجیوں نے بعض مقامت پر خاردار باڑوں پر شمعیں جلا کر دیوالی منائی اور پاکستانی فوجیوں کو دیوالی کی مٹھائی پیش کی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں