کشمیر: نیم فوجی دستے کے کیمپ پر حملہ، پانچ فوجی ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

انڈیا کے زیر انتظام کشمیر میں نیم فوجی دستے، سینٹرل ریزور پولیس فورس (سی آر پی ایف) کے کیمپ پر شدت پسندوں کے حملے میں پانچ فوجی ہلاک ہوئے ہیں جبکہ دو حملہ آوروں کی ہلاکت کی اطلاعات بھی ہیں۔

اب تک کی اطلاعات کے مطابق اس حملے میں سی آر پی ایف کے پانچ سپاہی اور کم ازکم دو جوان ہلاک ہوئے۔

سی آر پی ایف کے آئی جی روی دیپ ساہی کے مطابق انھیں فدائی حملے کی خفیہ اطلاعات تھیں۔

انھوں نے بتایا کہ سکیورٹی ایجنسیاں اب بھی سرچ آپریشن کر رہی ہیں تاکہ مبینہ انتھاپسندوں کو پکڑا جا سکے۔

سی آر پی ایف کے ایک اہلکار نے مقامی صحافی ماجد جہانگیر کو بتایا کہ یہ حملہ سنیچر اور اتوار کی درمیانی شب تقریبا رات دو بجے کیا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق تین فوجیوں کی موت گولی لگنے سے ہوئی ہے جبکہ ایک کی موت دل کا دورہ پڑنے سے۔

یہ بھی پڑھیے

کشمیر میں فوجی قافلے پر مسلح حملہ

کشمیر: بی ایس ایف کیمپ پر حملہ، دو حملہ آور ہلاک

کشمیر:فوجی کیمپ پر حملے میں تین انڈین فوجی ہلاک

سری نگر میں بی بی سی کے نمائندے ریاض مسرور نے بتایا کہ کالعدم تنظیم جیش محمد نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

یہ حملہ سرینگر سے 32 کلومیٹر کے فاصلے پر لیتھ پورا میں قائم سی آر پی ایف کی 185 ویں بٹالین کے کیمپ پر کیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

اطلاعات کے مطابق شدت پسندوں نے کیمپ میں داخل ہونے سے قبل ہینڈ گرینیڈ پھینکے اور پھر فائرنگ شروع کر دی۔

خیال رہے کہ رواں سال اگست میں خودکش حملہ آوروں نے پلواما میں پولیس لائنز کو نشانہ بنایا تھا جس میں انڈین سکیورٹی فورسز کے آٹھ فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔ جوابی کارروائی میں تین شدت پسند بھی مارے گئے تھے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں