احمد آباد میں پتنگ بازی فیسٹیول

انڈیا کے شہر احمد آباد میں 29 واں بین الاقوامی پتنگ بازی فیسٹیول منعقد ہوا۔ اس فیسٹیول میں لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور آسمان رنگ برنگی پتنگوں سے سج گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Kalpit Bhachech

اس فیسٹویل میں پاکستان میں قید انڈین شہری کلبھوشن یادو کی تصویر والی پتنگ بھی اُڑائی گئی اور پاکستان سے انھیں رہا کرنے کی اپیل کی گئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Kalpit Bhachech

فیسٹویل میں گجرات کے وزیر اعلیٰ وجے روپا نے بھی پتنگ بازی کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Kalpit Bhachech

اس فیسٹویل میں دنیا کے44 ممالک سے تعلق رکھنے والے پتنگ بازوں نے حصہ لیا اور رنگ برنگی پتنگیں اُڑائیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Kalpit Bhachech

انڈیا کی 20 مختلف ریاستوں سے تعلق رکھنے والے افراد نے پتنگ بازی میں حصہ لیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Kalpit Bhachech

پتنگ بازی کے اس فیسٹویل میں چھوٹی بڑی ہر سائز کی خوبصورت پتنگیں اُڑائی گئیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Kalpit Bhachech

فیسٹویل میں شریک پتنگ سازوں نے منفرد قسم کی پتنگیں متعارف کرائیں جنھیں دیکھ کر ناظرین بہت حیران اور محظوظ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پتنگ بازی میں دلچسپی رکھنے والے تمام عمر کےافراد نے اس فیسٹویل میں شرکت کی۔انڈونیشیا سے آنے والی سرگیوٹو نے احمد آباد کے سکول کے بچوں کے ساتھ سیلفی لی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پتنگ کو اڑانے کے لیے ڈور کو ایک خاص مادے سے تیار کیا جاتا ہے۔ یہ مادہ اتنا تیز ہوتا ہے کہ اگر آپ احتیاط نہیں کرتے تو اس سے آپ کا ہاتھ بھی کٹ سکتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

لوگ امرتسر لوہری فیسٹویل میں شرکت کے لیے شاپنگ کرتے ہیں جو کہ انڈیا کے شہر پنجاب میں ہر سال 13 جنوری کو منایا جاتا ہے۔ اس موقع پر پتنگوں کی مانگ میں اضافہ ہو جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

انڈیا کے شہر پنجاب میں گذشتہ سال لوہری فیسٹویل کے موقع پر سکول کی طلبہ کو پتنگ بازی سے منسوب روایتی لباس پہنائے گئے۔

متعلقہ عنوانات