وارانسی میں پل گرنے سے 18 افراد ہلاک، متعدد زخمی

واراناسی
Image caption جنوبی ایشیا میں فلائی اوور اور برج گرنے کے واقعات عام ہیں

انڈیا کی ریاست اترپردیش کے شہر وارانسی میں ایک پل گرنے کے حادثے میں کم سے کم 18 افراد ہلاک ہو گئے ہیں اور متعدد گاڑیاں پل کے نیچے دب گئی ہیں۔

امدادی ٹیموں کا کہنا ہے کہ ملبے تلے مزید مزدوروں کے پھنسے ہونے کا امکان بھی ہے۔ یہ مزدور فلائی اور کے گرنے کے وقت اس پر کام کررہے تھے۔

یہ حادثہ وارانسی کے کینٹ ریلوے سٹیشن کے قریب ہوا۔

یاد رہے کہ ہندو کے لیے مقدس سمجھا جانا والا شہر بنارس وارانسی انڈین وزیر اعظم نریندر مودی کا حلقہ ہے۔

مزید پڑھیے

وادی نیلم میں پل ٹوٹنے سے سات افراد ڈوب کر ہلاک، آٹھ لاپتہ

بس حادثہ: 27 بچوں کی ہلاکت، تحقیقات شروع

قدرتی آفات اور حادثات کی صورت میں امداد فراہم کرنے والے ادارے این ڈی آر ایف کا کہنا ہے کہ اب تک 18 لاشیں نکالی جا چکی ہیں۔ ابھی یہ معلوم نہیں کہ ملبے تلے کتنے افراد دبے ہیں جنھیں نکالنے کے لیے کوششیں جاری ہیں اور ان کی حالت کیسی ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق چند ہی افراد کو ریسکیو آپریشن میں نکالا جا سکا ہے۔ اس وقت جائے حادثہ پر سات کرینز کے ذریعے ملبے کو ہٹانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

ایک عینی شاہد نے ٹی وی چینل کو بتایا کہ پل گرنے کے موقع پر وہاں ایک منی بس، کم ازکم چار کاریں اور ایک رکشہ کچلا گیا۔

ریاست کے وزیر اعلیٰ یوگی ادتیا ناتھ نے ہلاک شدگان کے لواحقین کو پانچ لاکھ روپے دینے کا اعلان کیا ہے۔ حادثے کے بعد انھوں نے اپنے نائب کو حالات کا جائزہ لینے کے لیے جائے وقوع پر بھیجا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سوشل میڈیا پر پوسٹ کی جانے والی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ لوگ زخمیوں کی مدد کررہے ہیں۔

انڈیا کے وزیر اعظم نریندر مودی نے حادثے کے بعد افسوس کا اظہار کیا ہے اور حکام کو متاثرین کی ہر طرح سے مدد کرنے کی ہدایت دی ہے۔

جنوبی ایشیا میں فلائی اوور اور پل گرنے کے واقعات عام ہیں۔ اس سے قبل 13 مئی کو پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر کی وادی نیلم میں پل ٹوٹنے سے سات افراد ہلاک اور آٹھ لا پتہ ہوگئے تھے۔

جبکہ گذشتہ برس انڈیا کی مغربی ریاست گوا میں پیدل چلنے والوں کے لیے مختص ایک پل کے گرنے سے دو افراد ہلاک اور کئی دیگر لاپتہ ہوگئے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں