’وٹس ایپ زیادہ استعمال کرتی ہے،‘ دولھے نے دلھن کو چھوڑ دیا

واٹس ایپ تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مغربی ممالک کے برخلاف انڈیا میں زیادہ تر 'فیک نیوز' یا جھوٹی خبریں واٹس ایپ اور موبائل فون میسجز کے ذریعے پھیلتی ہیں

شمالی انڈیا کی ریاست میں ایک دولھے نے عین شادی کے دن دلھن کو چھوڑ دیا۔

دلھے نے الزام لگایا تھا کہ دلھن میسجنگ سروس وٹس ایپ پر بہت وقت ضائع کرتی ہے۔ تاہم دلھن نے اس الزام کی تردید کی ہے۔

دلھن کا تعلق امروہہ ضلعے کے ایک گاؤں سے ہے، اور اب اس کے خاندان نے دولھے کے خلاف مقدمہ دائر کر دیا ہے۔

مزید پڑھیے

لڑکی نے شادی کے منڈپ سے دولھے کو اغوا کر لیا

انھوں نے الزام لگایا ہے کہ دولھے نے جہیز میں بڑی رقم کا مطالبہ کیا تھا۔

وٹس ایپ انڈیا میں بےحد مقبول ہے اور اس کے 20 کروڑ سے زیادہ صارف ہیں۔ تاہم حالیہ مہینوں میں اس کی سروس تنازعے کا شکار ہو گئی ہے کیوں کہ حکومتی عہدے داروں کا کہنا ہے کہ اسے بےبنیاد افواہیں پھیلانے کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے جس سے تشدد کو فروغ ملتا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں