بھارتی خاتون وزیر کو چھونے کی ویڈیو وائرل

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption بی جے پی کی ریلی کا یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے

تریپورہ کے ایک بی جے پی رہنما پر وزیراعظم نریندر مودی کی موجودگی میں ایک خاتون وزیر کو غلط طریقے سے چھونے اور ان کی بے حرمتی کرنے کا الزام لگایا جا رہا ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ یہ واقعہ نو مارچ کا ہے جب اگرتلہ کی ریلی میں سٹیج پر نریندر مودی کے ساتھ ریاست کے وزیر اعلیٰ بھی موجود تھے۔

اس ریلی کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے جس میں تریپورہ کے وزیر منوج کانتی دیب ایک خاتون وزیر سانتنا چمکا کی کمر پر ہاتھ رکھ رہے ہیں اور سانتنا ان کا ہاتھ جھٹک رہی ہیں۔

32 سال کی سانتنا تریپورہ کی واحد اسمبلی ممبر ہیں اور ریاست میں سماجی بہبود کی وزیر ہیں جبکہ منوج کانتی دیپ نوجوانوں کے امور کے وزیر ہیں۔

انڈیا میں ریپ کے بڑھتے واقعات

جھارکھنڈ: پانچ خواتین کا مبینہ اجتماعی ریپ

ریپ ویڈیوز کے وائرل ہونے کا خطرناک رجحان

انڈیا: گینگ ریپ کی شکایت پر پولیس کے غیرمہذب سوال

تصویر کے کاپی رائٹ ARINDAM DEY/AFP/Getty Images
Image caption اس ریلی میں بھارتی وزی راعظم نریندر مودی بھی سٹیج پر موجود تھے

کئی مقامی نیوز چینلز نے یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر شیئیر کی ہے۔

اس ویڈیو پر حزبِ اختلاف نے بی جے پی پر حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی حکومت میں خواتین محفوظ نہیں ہیں۔ نریندر مودی کا ہمیشہ سے ہی نعرہ رہا ہے 'بیٹی پڑھاؤ ، بیٹی بچاؤ'

کمیونسٹ پارٹی نے مودی سے سوال کیا ہے کہ وزیر کے خلاف کوئی قدم کیوں نہیں اٹھایا جا رہا۔ ساتھ ہی منوج کانتی دیپ کے استعفے کا مطالبہ بھی کیا جا رہا ہے۔

کانگریس کی ایک رہنما نے ٹوئٹر پر لکھا'بی جے پی سے بیٹی بچاؤ'

ادھر منوج کانتی دیب کا کہنا ہے کہ یہ غلط پراپیگنڈہ کیا جا رہا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ پروگرام کے دوران سانتنا غلطی سے میرے سامنے آگئی تھیں انہیں ہٹانے کے لیے میں نے چھو بھی لیا تو میری نییت غلط نہیں تھی۔ میں انہیں صرف اپنے آگے سے ہٹانے کی کوشش کر رہا تھا۔ بعد میں بی جے پی کی جانب سے یے بھی کہا گیا کہ یہ ویڈیو جعلی ہے۔

تاہم مقامی اخبارات کے مطابق منگل کے روز سانتنا چمکا نے ایک بیان میں کہا ہے کہ انکے اس ریلی میں ان کے ساتھ غلط طریقے سے چھونے جیسا کچھ نہیں ہوا انہوں نے کہا کہ اس ویڈیو کو وائرل کر کے پبلِک میں انکی بے عزتی کرنے کے لیے وہ کمیونسٹ پارٹی کے خلاف قانونی کارروائی کرسکتی ہیں۔