انڈیا کا ایک اور مگ 21 طیارہ تباہ

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption مگ 21 کے پائلٹ گرتے طیارے سے باحفاظت باہر نکلنے میں کامیاب رہے

انڈین وزارت دفاع کے ترجمان کے مطابق جمعے کے روز راجھستان کے علاقے بکانیر میں انڈین طیارہ مگ 21 گر کر تباہ ہوگیا۔ انڈین خبر رساں ادارے پی ٹی آئی کے مطابق مگ 21 کے پائلٹ گرتے طیارے سے باحفاظت باہر نکلنے میں کامیاب رہے۔

گرنے والا انڈین طیارہ معمول کے مشن پر تھا اور نل ائیر بیس سے اڑان پکڑنے کے کچھ دیر بعد ہی گر کر تباہ ہوگیا۔ خبر رساں ادارے ہندوستان ٹائمز کو ملنے والی ابتدائی معلومات کے مطابق پرندے کے ساتھ ٹکرانا جہاز کے گرنے کا سبب بن سکتا ہے۔

وزارت دفاع کے ترجمان کا کہنا تھا کہ حادثے کی وجوہات کی تفتیش ایک کورٹ آف انکوائری کرے گا۔

مزید پڑھیے

بالاکوٹ میں انڈین طیارے پاکستانی طیاروں سے کیسے بچے؟

کیا پاکستان انڈیا کے خلاف F 16 طیارے استعمال کر سکتا ہے؟

انڈین پائلٹ ابھینندن کو بھارتی حکام کے حوالے کر دیا گیا

خبر رساں ادارے پی ٹی آئی کو بکانیر کے ایس پی پردیپ موہن شرما نے بتایا کہ مگ 21 طیارہ بکانیر کے شہر سے 12 کلومیٹر دور شوبہسار کی دھانی نامی علاقے میں گر کر تباہ ہوا۔ ان کا کہنا تھا کہ پولیس کی ٹیمیں موقعے پر پہنچ گئیں اور کسی جانی نقصان کی اب تک خبر موصول نہیں ہوئی۔

گذشتہ کچھ عرصے میں انڈین ائیر فورس کے دیگر لڑاکا طیارے اور ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ہوئے۔

یکم فروری کو مراج 2000 جنگی طیارہ ایک معمول کے مشن کے دوران گر کر تباہ ہوگیا۔ جہاز میں سوار دونوں پائلٹ باحفاظت باہر نہ نکل پائے اور ہلاک ہوگئے۔

12 فروری کو ایک مگ 27 طیارہ پوکھراں فائرنگ رینج میں گر کر تباہ ہوا تھا۔

اس سے زیادہ حالیہ واقعہ 27 فروری کو پیش آیا جب ایم آیی 17 ہیلی کاپٹر کشمیر کے علاقے بڈگام میں گر کر تباہ ہوگیا۔ انڈین ائیر فورس کے چھ اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ اس حادثے میں ایک عام شہری کی بھی ہلاکت ہوئی۔

انڈین فضائیہ کے دو لڑاکا طیارے تباہ کرنے کا دعوی 27 فروری کو ہی پاکستانی فوج کے ترجمان نے کیا۔ ترجمان کے جاری کردہ بیان کے مطابق انڈیا کے دو طیارے لائن آف کنٹرول کے اطراف میں گر کر تباہ ہوئے۔

اسی بارے میں