کراچی سے دِلی جانے والا طیارہ جے پور اترنے پر مجبور

طیارہ تصویر کے کاپی رائٹ ANI
Image caption انڈین وزارت دفاع کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ طیارہ ائیر ٹریفک سروسز کے راستوں پر نہیں اڑ رہا تھا

انڈین فضائیہ کے جنگی طیاروں نے اے این-12 ساخت کے جارجیا کے ایک مال بردار طیارے کو جے پور میں اترنے پر مجبور کیا ہے۔ یہ طیارہ مبینہ طور پر کراچی سے انڈیا میں شمالی گجرات کی جانب غیر مقررہ راستے پر پرواز کر رہا تھا۔ طیارے کے عملے سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔

انڈیا کی وزارت دفاع کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ طیارہ مسافر بردار طیاروں یعنی ایئر ٹریفک سروسز کے راستوں پر نہیں اڑ رہا تھا اور نہ ہی ایئر ٹریفک کی انتظامیہ کے اہلکاروں کے ریڈیو پیغامات کا کوئی جواب دے رہا تھا۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ جب فضائیہ کے اہلکاروں نے اسے چیلنج کیا تو طیارے کے پائلٹ نے بتایا کہ یہ طیارہ جارجیا کے شہر تبلیسی سے کراچی ہوتا ہوا دِلی جا رہا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

برما کا فوجی طیارہ لاپتہ ہوگیا

کیا ایک ’اسرائیلی طیارہ‘ پاکستان آیا تھا؟

انڈین فضائیہ کے ایک بیان کے مطابق جیسے ہی سوا تین بجے انڈین فضائی حدود میں اس طیارے کی موجودگی کا پتا چلا اسی وقت فضائیہ کے سکھوئی-30 ایم کے آئی ساخت کے دو جنگی طیارے اس کے تعاقب میں بھیجے گئے۔ ان دونوں جنگی طیاروں نے جارجیا کے طیارے کو جے پور اترنے پر مجبور کردیا۔

فضائیہ کی طرف سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’چونکہ خطے کے موجودہ حالات (انڈیا پاکستان کشیدگی) کے پیش نظر اس خطے میں فضائی حدود پرواز کے لیے بند ہیں، جب یہ طیارہ ایک غیر مقررہ راستے سے انڈین فضائی حدود میں داخل ہوا تو پوری طرح تیار طیاروں کو اسے نیچے اتارنے کے لیے بھیجا گیا۔‘

طیارے سے رابطہ قائم ہونے پر معلوم ہوا کہ وہ جارجیا کا ایک مال بردار طیارہ ہے اور وہ ایک غیرمقررہ پرواز پر تبلیسی سے کراچی ہوتے ہوئے دلی جا رہا تھا۔ طیارے کو مزید تفتیش کے لیے جے پور میں روک لیا گیا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں