کشمیر:سوپور میں جھڑپ، پولیس اہلکار ہلاک

Image caption فائرنگ کے اس واقعے کے بعد سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا

بھارت کے زیرِانتظام کشمیر میں عسکریت پسندوں اور پولیس کے مابین تصادم میں ایک پولیس اہلکار ہلاک اور تین زخمی ہوگئے ہیں۔

بھارتی خبر رساں ادارے پریس ٹرسٹ آف انڈیا کے مطابق یہ جھڑپ منگل کو شمالی کشمیر میں سوپور کے قصبے میں ہوئی۔

پولیس کے ترجمان کے مطابق سری نگر سے 55 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع سوپور کے علاقے چناخان میں عسکریت پسندوں کی موجودگی اطلاع پر پولیس نے فوج کی مدد سے آپریشن کیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ اس آپریشن کے دوران ایک مکان سے عسکریت پسندوں نے سکیورٹی فورسز پر فائرنگ شروع کر دی۔

انھوں نے کہا کہ فائرنگ سے ایک اے ایس آئی اور تین کانسٹیبل زخمی ہوئے جنھیں فوجی ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

ترجمان کے مطابق ان زخمی اہلکاروں میں سے اسسٹنٹ سب انسپکٹر کفیل احمد زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ فائرنگ کے اس واقعے کے بعد سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے اور مزید اہلکار بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئے ہیں۔

واضح رہے کہ گذشتہ چند برسوں کے دوران کشمیر میں مسلح تشدد کی سطح میں کمی آئي تھی۔

لیکن گذشتہ سال فروری میں سابق عسکریت پسند افضل گورو کو دہلی کی تہاڑ جیل میں خفیہ طور پھانسی دیے جانے کے بعد کشمیر میں مسلح تشدد کی نئی لہر چل پڑی ہے۔

اسی بارے میں