’گیپ بہت بڑھ گیا‘: لالو اب ٹویٹ بھی کیا کریں گے

لالو یادو
Image caption ٹوئٹر نوجوان نسل سے مخاطب ہونے کا بہترین ذریعہ ہے

بھارت کے مقبول سیاست دان لالو پرساد یادو نےسماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنا اکاؤنٹ بنایا ہے۔

ریاست بہار کے سابق وزیرِ اعلیٰ کا کہنا ہے کہ وہ ملک کے نوجوانوں کے ساتھ براہِ راست کمیونیکیشن چاہتے ہیں اسی لیے انہوں نے ٹوئٹر پر اکاؤنٹ کھولا ہے۔

سنیے لالو جی کی بی بی سی سے بات چیت

بی بی سی ہندی کے راجیش جوشی کے ساتھ ٹیلی فون پر انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ اس ملک کا مستقبل نوجوان نسل کے ہاتھوں میں ہے اور ملک میں فرقہ پرست طاقتیں انہیں ملک کی اصل صورتِ حال سے واقف کرانے کے بجائے انہیں گمراہ کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔

اس سوال پر کہ ٹوئٹر پر تو انگریزی میں لکھا جاتا ہے تو بھارت کا عام آدمی اسے کیسے پڑھ سکے گا تو لالو پرساد کا کہنا تھا کہ آج کی نسل انٹرنیٹ اور فون پر سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر بہت سرگرم ہے اور وہ انگریزی سمجھتی ہے۔

لالو پرساد یادو کا کہنا تھا کہ انہیں مخاطب کرنے یا ان سے رابطہ رکھنے کے لیے اس سے بہتر ذریعہ نہیں ہو سکتا۔

انھوں نے کہا کہ ٹوئٹر پر وہ ان طاقتوں کو جواب دینا چاہتے ہیں جو نوجوانوں کو گمراہ کر کے فرقہ پرستی کی جانب لےجانا چاہتے ہیں۔

لالو پرساد کا کہنا تھا کہ بھارت ایک سیکولر ملک ہے اور یہی اس کی خوبصورتی ہے لیکن ملک کے نوجوانوں کو ایسی فرقہ پرست پارٹیوں سے دور رکھنا ہے اور وہ ٹوئٹر پر اپنی موجودگی سے ملک کے سیکولر تانے بانے کو بچانے کی کوشش کریں گے۔

اسی بارے میں