بھارت: فون کے ڈبوں سے کئی کِلوسونا برآمد

Image caption بھارت دنیا میں سونے کے سب سے بڑے صارف ممالک میں سے ایک ہے

جنوبی ہند کے اہم شہر چینّئی کے ہوائی اڈے پر ایک تجارتی طیارے سے فون کے ڈبوں میں چھپا کر رکھا جانے والا 27 کلو سونا برآمد ہوا ہے۔

سونے کی قیمت کا تخمینہ تقریبا دس کروڑ بھارتی روپے لگایا جا رہا ہے۔

ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ برآمد ہونے والے سونے کو کون کِسے بھیج رہا تھا، تاہم حکام نے بتایا کہ یہ کارگو طیارہ ہانگ کانگ سے آیا تھا۔

بھارت دنیا میں سونے کے سب سے بڑے صارف ممالک میں سے ایک ہے۔ ملک کے کاروباری خسارے میں سونے کی درآمد بڑا کردار ادا کرتی ہے۔

گذشتہ سال سونے کے زیورات پر درآمد پر سرکاری فیس آٹھ فیصد سے بڑھا کر 10 فیصد کر دی گئي تھی۔

بہت سے بھارتی سونے کو اقتصادی تحفظ کے طور پر دیکھتے ہیں، تاہم حکومت ہند ملک میں سونے کی مانگ میں کمی کی کوشش کر رہی ہے۔

بھارت کے ریزرو بینک کا کہنا ہے کہ سونے کی درآمد پر عائد سختی کی وجہ سے دسمبر سنہ 2012 میں ختم ہونے والی سہ ماہی میں صرف 3.9 ارب ڈالر ( تقریبا 2.43 ٹریلین روپے ) کا سونا درآمد کیا گیا جبکہ اس سے قبل کی سہ ماہی میں 16.4 ارب ڈالر ( تقریبا 10.34 ٹریلین بھارتی روپے ) کا سونا درآمد ہوا تھا۔

اس درآمد پر کنٹرول کرنے کے لیے بھارت کے وزیر خزانہ پی چدمبرم نے لوگوں کو سونا نہ خریدنے کا مشورہ دیا تھا۔

وزیر خزانہ نے کہا تھا کہ ’اگر بھارتی عوام میری ایک خواہش کی تکمیل کر سکے تو میری ایک ہی خواہش ہے کہ وہ سونا نہ خریدیں۔‘

گذشتہ سال نومبر میں کولکتہ ہوائی اڈے پر بینکاک سے آنے والے جیٹ ایئر ویز کے ایک طیارے میں صفائی کرنے والوں کو سونے کی 24 سلاخیں ملی تھیں، جن کی قیمت 11 لاکھ ڈالر ( تقریبا 6.89 کروڑ بھارتی روپے ) بتائی گئي تھی۔

اسی بارے میں