تاجر کے پیٹ سے سونے کی اینٹیں برآمد

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارت دنیا میں سب سے زیادہ سونا استعمال کرنے والا ملک ہے

بھارت کے دارالحکومت دہلی میں ایک ڈاکٹر کے مطابق ایک کاروباری شخصیت کے پیٹ سے سونے کی بارہ اینٹیں برآمد ہوئی ہیں۔

63 سالہ تاجر کو قے اور پا خانے میں تکلیف کی شکایت کے بعد ہسپتال میں داخل کرایا گیا۔

تاجر نے ڈاکٹر کو بتایا کہ انھوں نے بیوی سے لڑائی کے بعد غصے میں آ کر بوتل کا ڈھکن نگل لیا تھا۔

لیکن جب ڈاکٹروں نے ان کا آپریش کیا تو انھیں ان کے معدے سے بوتل کی ڈھکن کے بجائے تقربیاً چار سو گرام کا سونا ملا۔

آپریشن کرنے والے ڈاکٹروں نے بی بی سی کو بتایا کہ پولیس اور کسٹم حکام نے تاجر سے پوچھ کچھ کی ہے اور سونے کو اپنے قبضے میں لیا ہے۔

دنیا میں بھارت سب سے زیادہ سونا استعمال کرنے والا ملک ہے جہاں دھات کی درآمد پر ٹیکس میں اضافے کی وجہ سے اس کی سمگلنگ میں رکارڈ اضافہ ہوا ہے۔

دہلی کے سر گنگا رام ہسپتال میں سینیئر سرجن ڈاکٹر سی ایس رام چندراں نے کہا کہ انھوں نے اپنی زندگی میں ’اس قسم کا کیس نہیں دیکھا۔‘

انھوں نے کہا کہ’یہ پہلی دفعہ ہے کہ میں نے کسی مریض کے پیٹ سے سونا نکلا ہے۔ مجھے یاد ہے کہ ایک دفعہ میں نے ایک مریض سے ایک کلو وزنی مثانے کا پتھر نکلا تھا۔لیکن ایک مریض کے پیٹ میں سونا ایک ناقابلِ یقین بات ہے۔‘

انھوں نے کہا کہ’یہ تکا دینے والا تین گھنٹے کا آپریش تھا۔ وہ ایک بزرگ مریض تھا اور ہمیں احتیاط سے کام لینا تھا۔ ہمیں ان کی پیٹ سے سونے کی 12 اینٹوں کا ڈھیر ملا۔‘

ڈاکٹر رام چندراں نے کہا کہ ماضی میں اس تاجر کے پیٹ کے چار آپریش ہو چکے ہیں اور وہ شوگر کا مریض ہے جنھیں اس مہینے کے اوائل میں آنتڑیوں میں تکلیف کی وجہ سے ہپستال میں داخل کرایا گیا تھا۔

گذشتہ سال بھارتی حکومت نے سونے کی مانگ میں کمی پیدا کرنے کے لیے اس کی درآمد پر ٹیکس میں تین گنّا اضافہ کیا۔