ایرانی طیارہ گر کر تباہ، ’38‘ ہلاک، 10 زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption طیارہ مہرآباد کے ہوائی اڈے سے پرواز کے فوراً بعد گر کر تباہ ہوا۔

ایران کے سرکاری میڈیا کے مطابق دارالحکومت تہران کے قریب ایک چھوٹا مسافر طیارہ گر کر تباہ ہو گیا ہے جس کے نتیجے میں 38 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

اس سے قبل ایرانی خبر رساں ایجنسیوں نے خبر دی تھی کے طیارے پر سوار تمام مسافر ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ اب سے کچھ دیر قبل ایرانی خبر رساں ایجنسی ارنا نے خبر دی ہے کہ طیارے پر سوار 10 افراد زخمی ہیں جنھیں مقامی ہسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

ایرانی میڈیا کے مطابق سپاہان ایئر لائنز کا یہ طیارہ اتوار کی صبح مشرقی شہر طبس کی جانب پرواز کر رہا تھا کہ مہرآباد ہوائی اڈے کے قریب گر کر تباہ ہوگیا۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق حادثے کا شکار ہونے والے جہاز میں 48 افراد سوار تھے جس میں عملے کے آٹھ ارکان شامل ہیں۔

یہ طیارہ مقامی وقت کے مطابق صبح 9:18 منٹ پر مہر آباد کے ہوائی اڈے سے پرواز کرنے کے فوراً بعد گر کر تباہ ہوگیا۔

بی بی سی فارسی کے مطابق طیارے پر دو سال سے کم عمر کے 3 جبکہ بارہ سال سے کم عمر کے 3 بچے شامل تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption طیارہ مشرقی شہر طبس جا رہا تھا

گر کر تباہ ہونے والا یہ طیارہ روسی ساختہ اینٹونوو AN-40 تھا جس کے ساتھ کے کئی طیارے مغربی ممالک کی ہوابازی سے متعلق پابندیوں کے نتیجے میں ایرانی ہوائی کمپنیوں کے استعمال میں ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption طیارہ روسی ساختہ اینٹونوو AN-40 تھا

یہ طیارے کا ماڈل اب تک 5 بڑے حادثوں کا شکار بن چکا ہے جس میں سے تین ایران میں پیش آئے۔

ایران میں اس سے قبل بھی مسافر طیاروں کے حادثات پیش آتے رہے ہیں جس کی اہم وجہ اس کے پرانے جہاز اور اس کی دیکھ بھال کا خراب ریکارڈ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption طیارے کا ملبہ ایک سڑک پر اور آبادی کے علاقے میں گرا

اس کی بڑی وجہ مغربی ممالک کی ایران کے خلاف اقتصادی پابندیاں ہیں جس کی وجہ سے ایرانی فضائی کمپنیاں مغربی طیارہ ساز کمپنیوں کے طیارے اور ان کے پرزے نہیں خرید سکتے۔

ایران میں اب بھی سنہ 1979 کے اسلامی انقلاب سے پہلے والے مسافر طیارے استعمال کیے جا رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Hadi
Image caption یہ طیارہ سپاہان ایئر لائنز کی جانب سے پرواز پر تھا

ایران میں گذشتہ 25 سال میں 200 سے زیادہ طیارے حادثے کا شکار ہو چکے ہیں جن میں 2,000 سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

جولائی سنہ 2009 میں شمالی ایران میں ہوائی جہاز کے ایک حادثے میں 160 سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

اس کے علاوہ سنہ 2003 میں فوج کے ایک ہوائی جہاز کے حادثے میں 275 فوجی اور عملے کے ارکان ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں