آیت اللہ خامنہ ای کے مثانے کا آپریشن

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption لوگ میری صحت کے لیے دعا کریں: آپریشن سے پہلے آیت اللہ خامنہ ای کی لوگوں سے اپیل

ایران سے موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق ایران کے اعلیٰ ترین مذہبی اور سیاسی رہنما آیت اللہ خامنہ ای کے مثانے کا آپریشن ہوا ہے۔

آیت اللہ خامنہ ای کا آپریشن پیر کے روز تہران کے سرکاری ہسپتال میں ہوا۔

ایرانی حکومت نے روحانی پیشوا آیت اللہ خامنہ ای کے مثانے کے آپریشن کو ’معمول‘ کی کارروائی قرار دیا اور اس کے بارے مزید کچھ کہنے سےگریز کیا ہے۔

75 سالہ آیت اللہ خامنہ ای 1989 سے ایران کے سب سے اعلیٰ مذہبی اور سیاسی رہنما ہیں۔

آیت اللہ خامنہ ای کو پیر کے روز ایرانی ٹیلی ویژن پر دکھایا گیا جس میں وہ لوگوں سے ان کی صحت کے لیے دعا کرنے کے لیے کہہ رہے ہیں۔ البتہ آیت اللہ خامنہ ای نے دعا کے اپیل کے دروان واضح طور پر کہا کہ کسی قسم کی پریشانی کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

ایران کے روحانی پیشوا کی ذاتی زندگی کی طرح ان صحت کا معاملہ بھی انتہائی خفیہ رکھا جاتا ہے۔

2007 میں آیت اللہ خامنہ ای نے جب زکام کی وجہ سے سرکاری تقریبات میں شرکت منسوخ کر دی تھی تو ان کی موت کی خبرگردش کرنے لگی تھیں۔

پیر کے روز آیت اللہ خامنہ ای کی جانب سے سرکاری ٹیلی ویژن پر اپنی صحت کے لیے دعا کی درخواست سے ظاہر ہوتا ہے کہ انھوں نے اپنی صحت کے متعلق اعلانات کے بارے میں طریقۂ کار تبدیل کر لیا ہے۔

آیت اللہ خامنہ ای ایرانی انقلاب کے بعد دوسرے روحانی پیشوا ہیں۔ انھیں آیت اللہ خمینی کی وفات کے بعد روحانی پیشوا مقرر کیا گیا تھا اور وہ اس کے بعد سے ایران کے سب سے بااثر مذہبی اور سیاسی رہنما ہیں۔

اسی بارے میں