چین اور بھارت میں اہم اقتصادی معاہدے طے پانے کا امکان

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption چینی صدر کا کہنا تھا کہ ان کے دورے کا مقصد دوستی کو آگے بڑھانا ہے

چینی صدر شی جی پنگ بھارت میں ہیں جہاں دونوں ممالک میں اہم اقتصادی معاہدے طے پانے کا امکان ہے جبکہ اس دوران باہمی کشیدہ تعلقات میں بہتری لانے کی کوشش بھی کی جائے گی۔

چینی صدر نے کہا ہے کہ وہ بھارت کے دورے سے تین چیزیں حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ان کے دورے کا پہلا مقصد دوستی کو آگے بڑھانا ہے، جبکہ ’دوسرا ہدف دونوں ممالک کے درمیان تعاون کو فروغ دینا ہے۔ تیسرا ہدف بھارت اور چین کے رشتوں کی اسٹریٹجک اہمیت کو سمجھتے ہوئے اسے آگے بڑھانا ہے۔‘

ان کا کہنا تھا: ’دونوں ملک جب مل کر کام کریں تو ایشیا اور دنیا بھر میں خوشحالی لا سکتے ہیں۔‘

چینی صدر نے کہا کہ بھارت اور چین ترقی کو پہلا ہدف سمجھتے ہیں۔

بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان سید اكبرالدين نے کہا: ’دونوں ممالک کے درمیان تمام مسائل پر بات چیت ہوگی۔ بھارت اور چین کے درمیان وسیع تعلق ہے۔ ہم باہمی تعاون بڑھانے پر بات چیت جاری رکھیں گے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption دونوں رہنماؤں کی بدھ کو بھی ملاقات ہوئی تھی

اكبرالدين نے کہا: ’تمام مسائل پہلے بھی اٹھائے گئے ہیں اور اس دوران حالیہ واقعات پر بھی بحث ہوگی۔‘

وزارت خارجہ کے ترجمان سید اكبرالدين نے کہا کہ چینی فوجیوں کی ہندوستانی سرحد میں مبینہ دراندازی کے معاملے پر چینی صدر سے بات ہوگی۔

انھوں نے نامہ نگاروں کو بتایا: ’میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ صدر شی جن پنگ کے سامنے تازہ دراندازی کا مسئلہ اٹھایا جائے گا۔‘

انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور شی جن پنگ کے درمیان بدھ کو بھی اس معاملے پر مذاکرات ہوئے تھے: ’تازہ دراندازی کا مسئلہ آج ہونے والی بات چیت میں پھر اٹھایا جائے گا۔‘

اکبر الدین نے کہا کہ بھارت اور چین کے درمیان دوسرے کئی اہم مسائل پر بھی بات چیت ہوگی، جن میں دو طرفہ اقتصادی تعاون کا معاملہ بھی شامل ہے۔

اسی بارے میں