چین میں بی بی سی ویب سائٹ بلاک کر دی گئی

Image caption چین میں ویب صارفین شکایت کر رہے ہیں کہ وہ بی بی سی کی انگریزی خبروں کی ویب سائٹ کھول نہیں پا رہے

بی بی سی کا کہنا ہے کہ چین میں اس کی انگریزی زبان کی ویب سائٹ بلاک کر دی گئی ہے۔

بی بی سی کے گلوبل نیوز کے ڈائریکٹر پیٹر ہوروکس نے کہا کہ بی بی سی کی ویب سائٹ کی ’جان بوجھ کر سنسر شپ‘ کی جا رہی ہے اور بی بی سی چینی حکام سے اس کی شکایت کرے گی۔

دیگر اہم خبروں کی ویب سائٹیں معمول کے مطابق کام کر رہی ہیں، بی بی سی کی ویب سائٹ کو بلاک کرنے کی وجہ اب تک واضح نہیں کی جا رہی۔

سنہ 2008 میں بیجنگ اولمپکس کے بعد سے بی بی سی کی انگریزی زبان کی ویب سائٹ چین میں دستیاب تھی۔ لیکن اس کی چینی زبان اور دیگر زبانوں کی ویب سائٹیں مقابلوں کی آغاز سے ہی بلاک کر دی گئی تھیں۔

دنیا کے تمام بیرونی خبر رساں اداروں کے ساتھ ساتھ بی بی سی ورلڈ ٹی وی بھی جب چین کے بارے میں رپورٹ کرتا ہے تو اسے بھی بلاک کر دیا جاتا ہے۔

پیٹر نے کہا: ’بی بی سی دنیا بھر میں لاکھوں لوگوں کو غیر جانبدار اور قابل اعتماد خبریں فراہم کرتی ہے، اور ہماری خبروں کی سروسز کو سینسر کرنے کی کوششیں یہی ظاہر کرتی ہیں کہ لوگوں تک درست معلومات پہنچانا کتنا ضروری ہے۔‘

پچھلی بار بی بی سی کی انگریزی زبان کی ویب سائٹ اپریل 2012 میں بلاک کر دی گئی تھی جب اس نے ایک سماجی کارکن شین گوانشینگ کی نظربندی سے فرار ہونے کی خبریں رپورٹ کی تھیں۔

اسی بارے میں