نیپال: ہمالیہ کے پہاڑوں پر برفانی طوفان سے 21 ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

جنوبی ایشیائی ملک نیپال میں حکام کا کہنا ہے کہ ہمالیہ کے پہاڑی سلسلے میں شدید ژالہ باری اور برفباری سے غیر ملکیوں سمیت کم از کم 21 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ ہلاک شدگان میں سے دس غیر ملکی ہیں اور بہت سے مہم جو لاپتہ بھی ہیں۔

نیپالی حکام کا کہنا ہے کہ سب سے زیادہ ہلاکتیں ضلع مستانگ کے اناپورنا سرکٹ میں ہوئیں جہاں 12 افراد مارے گئے۔

ہلاک ہونے والے یہ مہم جو تھورنگ کے پہاڑی درے سے لوٹ رہے تھے کہ برفانی طوفان کی زد میں آ گئے۔

اس واقعے کی اطلاع ملتے ہی نیپال کی فوج نے امدادی کارروائیاں شروع کر دیں جسے ہیلی کاپٹروں کی مدد بھی حاصل ہے۔

حکام کے مطابق مرنے والوں میں نیپالی باشندوں کے علاوہ پولینڈ اور اسرائیلی کے دو، دو شہری شامل ہیں جبکہ اس مہم میں شریک 40 افراد کو بچا لیا گیا ہے۔

اناپورنا کے ہی ڈھلوانی علاقے میں منانگ میں برفانی طوفان کی زد میں آ کر تین مقامی افراد اور ایک بھارتی اور چار کینیڈین شہریوں کی ہلاکت کی بھی اطلاعات ہیں۔

اس کے علاوہ اناپورنا کے مشرق میں ماؤنٹ مناسلو کے قریب ایک فرانسیسی شہری دریا میں ڈوب کر ہلاک ہوا ہے۔

کھٹمنڈو میں بی بی سی کے نامہ نگار پھنڈارا ڈاہل کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ یہ غیرمتوقع برفباری سمندری طوفان ہدہد کی وجہ سے بھی ہو سکتی ہے۔

یہ سمندری طوفان رواں ہفتے ہی بھارت کے جنوب مشرقی ساحل سے ٹکرانے کے بعد نیپال کی جانب آیا تھا اور اب اس کا رخ چین کی طرف ہے۔

یہ ہلاکتیں نیپال میں دنیا کے سب سے اونچے پہاڑ ماؤنٹ ایورسٹ پر 16 شرپا گائیڈز کی ہلاکت کے چند ماہ بعد ہی ہوئی ہیں۔

نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ نیپال میں مہم جوئی ایک بڑی صنعت ہے اور اس واقعے سے ملک کی معیشت کی مددگار اس صنعت کو شدید دھچکا پہنچنے کا خدشہ ہے۔